Book Name:Khof e Khuda عزوجل

تر جمۂ کنز الایمان :  اور آخرت تمہارے رب کے پا س پرہیزگاروں کے لیے ہے۔(  پ۲۵، الز خرف ؛۳۵ )

(جنت کے باغات۔۔۔۔۔)

         اپنے پروردگار  عَزَّوَجَلَّ   کا خوف اپنے دل میں بسانے والوں کو جنت کے باغات اور چشمے عطا کئے جائیں گے ، جیسا کہ رب   تَعَالٰی  کا فرمان ہے ،

اِنَّ الْمُتَّقِیْنَ فِیْ جَنّٰتٍ وَّ عُیُوْنٍؕ

تر جمۂ کنز الایمان : بے شک ڈر والے باغو ں اور چشموں میں ہیں ۔( پ ۱۴، الحجر  ؛ ۴۵  )

(آخرت میں امن۔۔۔۔۔)

         دنیا میں اپنے خالق ومالک  عَزَّوَجَلَّ   کا خوف رکھنے والے آخر ت میں امن کی جگہ پائیں گے ، جیسا کہ ارشاد ہوتا ہے

اِنَّ الْمُتَّقِیْنَ فِیْ مَقَامٍ اَمِیْنٍۙ

تر جمۂ کنزالایمان : بے شک  ڈر والے امان کی جگہ میں ہیں ۔( پ ۲۵، ا لد خا ن :  ۵۱ )

(اللہ   تَعَالٰی  کی تائید ومدد۔۔۔۔۔)

اللہ   تَعَالٰی  سے ڈرنے والوں کو اس کی تائید ومدد حاصل ہوتی ہے ، چنانچہ ارشاد ہوتا ہے ،
                       اِنَّ اللّٰهَ مَعَ الَّذِیْنَ اتَّقَوْا وَّ الَّذِیْنَ هُمْ مُّحْسِنُوْنَ۠

تر جمۂ کنزالایمان : بے شک اللہ ، ان کے ساتھ ہے جو ڈر تے ہیں اور جو نیکیا ں کرتے ہیں ۔(پ ۱۴، ا لنحل :  ۱۲۸)

        دوسرے مقام پر ہے ،

اَنَّ اللّٰهَ مَعَ الْمُتَّقِیْنَ

تر جمۂ کنزالایمان :  اللہ  ڈر والوں کے ساتھ ہے ۔( پ ۲، البقر ۃ ؛۱۹۴ )

        مزید ایک مقام پر ارشاد ہوتا ہے،

وَ اللّٰهُ وَلِیُّ الْمُتَّقِیْنَ

تر جمۂ کنزالایمان :  اور ڈر والوں کا دوست اللہ  ہے ۔( پ ۲۵، الجا ثیۃ ؛ ۱۹  )

(اللہ   عَزَّوَجَلَّ  کے پسندیدہ بندے۔۔۔۔۔)

         خوفِ خدا عَزَّوَجَلَّ  رکھنے والے خوش نصیب اللہ   تَعَالٰی  کا پسندیدہ بندہ بننے کی سعادت حاصل کر لیتے ہیں ، جیسا کہ ارشاد ہوتا ہے ،

اِنَّ اللّٰهَ یُحِبُّ الْمُتَّقِیْنَ

تر جمۂ کنزالایمان :  بیشک پر ہیز گار، اللہ  کو خوش آتے ہیں ۔( پ۱۰، التوبہ ؛ ۷  )

(اعمال کی قبولیت۔۔۔۔۔)

         خوفِ الٰہی اعمال کی قبولیت کا ایک سبب ہے ، جیسا کہ ارشاد ہوتا ہے ،

اِنَّمَا یَتَقَبَّلُ اللّٰهُ مِنَ الْمُتَّقِیْنَ

تر جمۂ کنزالایمان : اللہ  اسی سے قبو ل کر تا ہے ، جسے ڈر ہے۔  (  پ ۶، المائد ہ :  ۲۷ )

(بارگاہ ِ الٰہی میں مقرب۔۔۔۔۔)

         اپنے رب  عَزَّوَجَلَّ  سے ڈرنے والے سعادت مند اس کی بارگاہ میں مقرب قرار پاتے ہیں ، چنانچہ ارشاد ہوتا ہے ،

اِنَّ اَكْرَمَكُمْ عِنْدَ اللّٰهِ اَتْقٰىكُمْؕ

تر جمۂ کنزالایمان : بے شک اللہ  کے یہاں ، تم میں زیا دہ عز ت والا وہ ، جو تم میں زیا دہ پرہیز گا ر ہے ۔۲۶، الحجر ات :  ۱۳ )

(اُخروی کامیابی کا سامان۔۔۔۔۔)

        اللہ   تَعَالٰی  کا خوف دنیا وآخرت میں کامیابی کا سامان ہے ، جیسا کہ ارشاد ہوتا ہے ،

الَّذِیْنَ اٰمَنُوْا وَ كَانُوْا یَتَّقُوْنَؕ(۶۳) لَهُمُ الْبُشْرٰى فِی الْحَیٰوةِ الدُّنْیَا وَ فِی الْاٰخِرَةِؕ

تر جمۂ کنزالایمان :  وہ جو ایمان لائے اور وہ پر ہیز گا ری کرتے ہیں ، انہیں خوشخبری ہے، دنیا کی زندگی میں اور آخرت میں ۔( پ۱۱، یونس :  ۶۳،  ۶۴)

        دوسری جگہ ارشاد فرمایا،

وَ مَنْ یُّطِعِ اللّٰهَ وَ رَسُوْلَهٗ وَ یَخْشَ اللّٰهَ وَ یَتَّقْهِ فَاُولٰٓىٕكَ هُمُ الْفَآىٕزُوْنَ

تر جمۂ کنزالایمان : اور جو حکم مانے اللہ  اور اس کے رسول کا اور اللہ  سے ڈرے اور پرہیز گا ری کرے تو یہی لوگ کا میاب ہیں ۔(  پ۱۸، النور ؛ ۵۲ )

 



Total Pages: 42

Go To