Book Name:Garmi say hifazat kay Madani Phool

   چاوَل کا (طِب کے حساب سے)  مزاج سرد ہے،  گرمی میں روزانہ چاول کھانے سے بدن کو ٹھنڈک ملتی ہے،  گرمیوں میں چاول کے ساتھ سبزیاں کھانا زیادہ مفید ہے۔   دَہی کھچڑی گرمیوں کی بہترین غذا ہے۔  یاد رہے! دیگ کی مسالے دارلذیذ بریانی صحّت کی دشمن ہے،  پانی میں اُبلے ہوئے چاول کھانا مناسب ہے۔ 

گرمی اورلُو سے حفاظت کا لذیذ شربت

          حسبِ ضرورت کچے آم  (یعنی کیریاں )  لے کر ،  چھلکے اُتار کر پانی ڈال کر چُولھے پر چڑھا دیجئے ،  دو چار اُبال آنے پر کیریاں گل جائیں گی، مل مسل کر گٹھلیاں نکال دیجئے اور سارا گُودا گرینڈر میں پیس لیجئے،  گاڑھا شربت بن جائے گا،  دُگنی مقدار میں چینی  ( بہتر ہے کہ براؤن شوگر)  ملا کر پھر چولھے پر چڑھا کر جوش دیجئے تا کہ چینی حل ہو جائے ۔   ٹھنڈا کرنے کے بعد بوتلوں میں بھر کر رکھ لیجئے۔   رَمَضانُ المبارَک میں سحری و افطار میں حسبِ ضرورت پانی ملا کریہ لذیذ شربت پی لیجئے۔   اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّ گرمی اور لُو سے حفاظت رہے گی۔ 

کمزوری  دُورکرنے کا نسخہ

        دو چمچ چینی  ( بہتر ہے کہ براؤن شوگر )  اورایک چمچ سفید نمک ، آدھے کلو پانی میں ڈال کر ابال لیجئے،  ٹھنڈا ہو جانے کے بعد افطار میں ایک گلاس پی لیجئے۔   جسم میں ہونے والی پانی کی کمی اورکمزوری اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّ دُور ہو جائے گی۔   مریضوں کی کمزوری دور کرنے کیلئے بھی یہ پانی مفید ہے ( شوگر اور ہائی بلڈ پریشر کے مریض ڈاکٹر کے مشورے کے مطابق عمل کریں )

گرمی دانوں کا علاج

        گرمی دانے ستاتے ہوں تو نیم کی 11کو نپلیں  ( نئی نکلی ہوئی چھوٹی چھوٹی پتّیاں )  سات دن اور تکلیف زیادہ ہو تو 40دن تک نَہارمنہ (یعنی ناشتے سے قبل خالی پیٹ )   پانی کے ساتھ کھالیجئے اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّ گرمی دانے اور پھوڑے پھنسیاں ختم ۔   اگر گرمیاں شروع ہونے سے قبل ہی 30دن تک یہ کورس کر لیں تو اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّ گرمی دانے وغیرہ نکلیں گے ہی نہیں ۔    (گھریلو علاج ص۴۴)

حَیض بند ہونے کا علاج

        اگر گرمی یا خشکی کے باعث ( عورت کا)  حیض بند ہو جائے تو ایک کپ سونف کے عَرَق میں ایک چھوٹا چمچ تربوز کے بیج کا مَغْز اور ایک چمچ شَہْد ملا کر صبح و شام پئیں اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّ فائدہ ہوجائے گا۔   پانی خوب کثرت سے پئیں ،  ہو سکے تو روزانہ12 گلاس پی لیں ۔     (گھریلو علاج ص۱۰۲)

گرمی سے بچنے کیلئے رنگ برنگے 25مَدَنی پھول

                                                      {۱} جتنا ہو سکے اپنی بھنویں  (یعنی اَبرو۔  Eyebrow)  پانی سے تررکھئے۔   ( اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّ اس سے لُو ،  گرمی ،  پیاس کی شدّت ،  ٹینشن ،  ڈپریشن اور سردرد سے حفاظت ہو گی)  {۲} چولھے وغیرہ کااستِعمال کم کر دیجئے {۳} سفید یا ہلکے رنگ کا سُوتی  ( Cottonکا) ڈھیلا لباس پہنئے۔   (زہے نصیب! اسلامی بھائی  سنّتوں بھرا سفید لباس زیبِ تن فرمائیں )  {۴} ہر وقت چھوٹا سا تولیا (Towel)  ساتھ رکھئے تاکہ گرمی محسوس ہونے پر ٹھنڈے پانی میں گیلا کر کے سر پر رکھا جا سکے {۵} مَشَقَّت والے کام سے بچنا بہتر ہے،  مجبوری کا لحاظ بیماری نہیں کیا کرتی۔   {۶} دن میں دو مرتبہ نہانامفید تر ہے  {۷} دھوپ میں نکلتے وقت سن گلاسز کا استعمال آنکھوں کو گرمی سیمُتَاَثِّرہونے سے بچاتا ہے {۸} گھر سے باہر نکلنے کی صورت میں پیاز کا ٹکڑا ہاتھ یا جیب میں رکھئے ،  بچّوں کے گلے میں ڈال دیجئے اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّ لُو سے حفاظت ہو گی {۹} خود پربراہِ راست دھوپ نہ پڑے اس کا خیال رکھئے اور خُصُوصاً دن کے گرم ترین اوقات 11تا3بجے کے دوران سائے میں وقت گزاریئے ،  نمازِ ظہر کیلئے دھوپ میں نکلنے والے اسلامی بھائی سر اور گردن ڈھانک کر اور ہو سکے تو چھتری کے ساتھ نکلیں ۔ 

     (اَلْحَمْدُلِلّٰہ عَزَّ وَجَلَّعمامہ شریف کی سنّت ادا کرنے والوں کاسر ڈھک جاتا ہے اور گردن بھی چُھپ سکتی ہے،  سر پر سفید چادر ہو تو فوائد مزید بڑھ سکتے ہیں )  {۱۰} لوڈ شیڈنگ کے دوران سر پر گیلا تولیا رکھئے،  ہاتھ کا پنکھا استعمال کیجئے اور بدن پر پانی ڈالتے رہئے {۱۱} پیاس لگے یا نہ لگے روزانہ کم از کم 12 بلکہ ہو سکے تو14گلاس پانی پئیں ۔   (اس مقدار میں غذاؤں کے اندر موجود پانی بھی شامل ہے مثلاً 10گلاس پانی پینے کے علاوہ پھلوں اور دیگر غذاؤں کے ذریعے دو گلاس جتنا پانی پیٹ میں گیا تو 12 گلاس ہو گئے)  {۱۲} بدن کے پانی اورنمکیات کا توازُن برقرار رکھنے کیلئے O.R.S. کا استعمال کیجئے۔   ( ہائی بلڈ پریشر کے مریض ڈاکٹر کے مشورے کے



Total Pages: 7

Go To