Book Name:Doodh Pita Madani Munna

آقا صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ کو دودھ بہت پسند تھا

           رسولِ اکرم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ کوپینے کی چیزوں میں دودھ بہت پسند تھا۔   (اَخلاقُ النّبی ص ۱۲۲  حدیث ۶۱۴ چنانچہ’’ بخاری شریف‘‘ میں ہے:سرکارِ مدینہ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَکو ہدیہ  (gift میں دودھ بھیجا گیاجسے آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے اَصحاب صُفّہ عَلَیْہِمُ الرِّضْوَان

کو بھی پلایااور خود بھی نوشِ جان فرمایا یعنی پیا۔   (بُخاری ج۴ص ۲۳۴ حدیث۶۴۵۲ مُلخّصاً) 

ماں کے دودھ کے چار مدنی پھول

{۱}انسانی دودھ جراثیم سے پاک اور بچّے کیلئے بہت بڑی نعمت ہے ،  اس میں بچپن میں پیش آنے والی اکثر بیماریوں سے بچانے کی صلاحیت ہے۔

{۲} ماں کا دودھ پینے والے بچے کو الرجی  (Allergy  کا امکان کم ہوتا اور دست   (Diarrhoeaبھی کم ہی لگتے ہیں اوراگر لگتے بھی ہیں تو زیادہ خطرناک ثابت نہیں ہوتے ،   جبکہ جو مَدَنی مُنّے اور مَدَنی منیاں ماں کادودھ نہیں پیتے انہیں ماں کاد ودھ پینے والوں کے مقابلے میں الرجی کاامکان سات گنا اور دَستوں    (Diarrhoea کا امکان پندرہ گناہوتا ہے۔

{۳} ماں کادودھ پینے والے بچوںکے دانتوں کے سڑنے ،  کالے پڑنے،   سینے کے انفیکشن ،  دمے ،   معدے کی خرابیوں نیز گلے،   ناک اورکان کی بہت سی بیماریوں سے عموماً حفاظت رہتی ہے۔  

{۴} اگر کسی سبب سے ماں دودھ نہ پلا سکے تو ڈبوں کے دودھ کے بجائے کسی بھی پرہیز گار خاتون سے دودھ پلایا جائے اِس سے بھی اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّ فوائد حاصل ہو ں گے۔

بچّے کو دودھ پلانے کی مُدّت

        بچے کو  (ہجری سن کے حساب سے)   دو برس  (کی عمر)   تک  (عورت کا)   دودھ پلایا جائے،   اس سے زیادہ کی اجازت نہیں،   دودھ پینے والا لڑکا ہو یا لڑکی۔  اور یہ جو بعض عوام میں مشہور ہے کہ لڑکی کو دو برس تک اور لڑکے کو ڈھائی برس تک پلا سکتے ہیں یہ صحیح نہیں۔  یہ حکم دودھ پلانے کا ہے جبکہ نکاح حرام ہونے کے لیے   (ہجری سن کے حساب سے)   ڈھائی برس کا زمانہ ہے یعنی دو ۲ برس  (کی عمر)   کے بعد اگرچِہ دودھ پلانا حرام ہے مگر ڈھائی برس   (کی عمر)  کے اندر اگر دودھ پلا دے گی،   حرمت نکاح  (یعنی  نکاح حرام ہونا )  ثابت ہو جائے گی  (کیوں کہ دودھ کا رشتہ قائم ہو جائے گا )   اور اس کے بعد اگر پیا،   توحرمت نکاح نہیںاگرچہ پلانا جائز نہیں۔    (بہار شریعت ج ۲ص۳۶

دودھ کے47 مدَنی پھول

 



Total Pages: 15

Go To