Book Name:Betay ko Nasihat

نفس کی اِصلاح اورفکرآخرت کاجذبہ بڑھانے والی جامع تحریر

اَیُّھَا الْوَلَدَ

ترجمہ بنام

بیٹے کونصیحت

مؤلف  :    

حُجَّۃُ الْاِسْلامحضرتِ سیِّدُنااِمام محمدبن محمدغزالی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللّٰہِ الْوَالِی

 

مُتَرْجِمِیْن  :    مدنی عُلما ( شعبہ تراجمِ کتب )

 

پیش کش :     مجلس المدینۃ العلمیۃ ( دعوتِ اسلامی )

 

ناشر

مکتبۃ المدینہ باب المدینہ کراچی

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

’’ نصیحت قبول کرو  ‘‘ کے 12حروف کی نسبت سے

اس کتاب کو پڑھنے کی ’’ 12 نیّتیں   ‘‘

           فرمانِ مصطفی صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم :    ’’  نِیَّۃُ الْمُؤْمِنِ خَیْرٌ مِّنْ عَمَلِہٖیعنی مسلمان کی نیّت اس کے عمل سے بہتر ہے۔ ‘‘  ( المعجم الکبیر للطبرانی ،    الحدیث  :     ۵۹۴۲ ،    ج۶ ،    ص۱۸۵)  

 دو مَدَنی پھول :   

  { ۱ }  بِغیر اچھی نیّت کے کسی بھی عملِ خیر کا ثواب نہیں   ملتا۔  

 { ۲ } جتنی اچھی نیّتیں   زِیادہ ،   اُتنا ثواب بھی زِیادہ۔  

             { ۱ } ہر بارحمد و  { ۲ } صلوٰۃ اور { ۳ } تعوُّذو { ۴ } تَسمیہ سے آغاز کروں   گا۔   ( اسی صَفْحَہ پر اُوپر دی ہوئی دو عَرَبی عبارات پڑھ لینے سے چاروں   نیّتوں   پر عمل ہوجائے گا ) ۔   { ۵ }  رِضائے الٰہی کے لئے اس کتاب کا اوّل تا آخِر مطالَعہ کروں   گا۔   { ۶ } حتَّی الْوَسْعْاِس کا باوُضُو اور قِبلہ رُو مُطالَعَہ کروں   گا۔  { ۷ } جہاں   جہاں  ’’اللہ ‘‘کا نامِ پاک آئے گا وہاں  عَزَّوَجَلَّ اور  { ۸ }  جہاں   جہاں   ’’سرکار‘‘کا اِسْمِ مبارَک آئے گا وہاں   صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم پَڑھوں   گا۔  { ۹ } دوسروں   کویہ کتاب پڑھنے کی ترغیب دلاؤں   گا۔  { ۱۰ }  ( اپنے ذاتی نسخے پر )  عندالضرورت خاص خاص مقامات انڈرلائن کروں   گا۔  { ۱۱ } اس حدیثِ پاک ’’تَھَادَوْا تَحَابُّوْا‘‘ ایک دوسرے کو تحفہ دو آپس میں   محبت بڑھے گی ۔ ‘‘  ( مؤطاامام مالک ،   ج۲ ،    ص۴۰۷ ،    الحدیث  :    ۱۷۳۱ ) پرعمل کی نیت سے ( ایک یا حسبِ توفیق )  یہ کتاب خرید کر دوسروں   کو تحفۃً دوں   گا۔  { ۱۲ } کتابت وغیرہ میں   شَرْعی غلَطی ملی تو نا شرین کو تحریری طور پَر مُطَّلع کروں   گا۔

 ( مصنّف یاناشِرین وغیرہ کو کتا بوں   کی اَغلاط صِرْف زبانی بتاناخاص مفید نہیں   ہوتا )

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

المدینۃالعلمیۃ

از :   شیخِ طریقت ،   امیرِ اہلسنّت  ، بانیٔ دعوتِ اسلامی حضرت علّامہ

 



Total Pages: 23

Go To