Book Name:Aarabi kay Sawalat aur Arabi Aaqa kay jawabat

ارشادفرمایا : کسی پر ظُلْم مت کرو، تمہارا حَشْر نُور میں  ہوگا۔

عرض کی :  میں  چاہتا ہوں  کہ اللّٰہ   تَعَالٰی  مجھ پر رحم فرما ئے ۔

 ارشادفرمایا : اپنی جان پر اور مخلوقِ خدا پر رحم کرو ، اللّٰہ  تَعَالٰی  تم پر رحم فرما ئے  گا۔

عرض کی : گناہوں  میں  کمی چاہتا ہوں ۔

 ارشادفرمایا :  اِستغفار کرو، گناہوں  میں  کمی ہوگی۔

عرض کی :  زیادہ عزت والا بننا چاہتا ہوں ۔

 ارشادفرمایا : لوگوں  کے سامنے اللّٰہ   تَعَالٰی  کے بارے میں  شکوہ وشکایت مت کرو، سب سے زیادہ عزت دار بن جا ؤگے۔

عرض کی : رِزْق میں  کشادگی چاہتا ہوں ۔

 ارشادفرمایا : ہمیشہ باوضو رہو، تمہارے رزق میں  فراخی آ ئے  گی ۔

عرض کی : اللّٰہ و رسول کا محبوب بننا چاہتا ہوں ۔

 ارشادفرمایا : اللّٰہ ورسول کی محبوب چیزوں  کو محبوب اور ناپسند چیزوں  کو ناپسند رکھو۔

عرض کی : اللّٰہ  تَعَالٰی  کی ناراضی سے امان کا طلب گار ہوں ۔

 ارشادفرمایا : کسی پر غصہ مت کرو، اللّٰہ  تَعَالٰی  کی ناراضی سے امان پاجا ؤگے۔

عرض کی : دعاؤں  کی قبولیت چاہتا ہوں  ۔   

 ارشادفرمایا : حرام سے بچو، تمہاری دعا  ئیں قبول ہوں  گی۔

عرض کی :  چاہتا ہوں  کہ اللّٰہ   عَزَّوَجَلَّ     مجھے لوگوں  کے سامنے رُسوا نہ فرما ئے ۔

 ارشادفرمایا : اپنی شرم گاہ کی حفاظت کرو ، لوگوں  کے سامنے رُسوا نہیں  ہوگے۔

عرض کی : چاہتا ہوں  کہ اللّٰہ   تَعَالٰی  میری پردہ پوشی فرما ئے ۔

 ارشادفرمایا :   اپنے مسلمان بھائیو ں  کے عیب چھپا ؤ ، اللّٰہ   عَزَّوَجَلَّ     تمہاری  پردہ پوشی فرما ئے  گا۔

عرض کی :  کون سی چیز میرے گناہوں  کو مٹاسکتی ہے؟

 ارشادفرمایا : آنسو، عاجزی اور بیماری ۔

عرض کی :  کون سی نیکی اللّٰہ عزوجل  کے نزدیک سب سے افضل ہے؟

 ارشادفرمایا : اچھے اخلاق، تواضُع، مصاءب پر صبر اور تقدیر پر راضی رہنا۔

عرض کی : سب سے بڑی برا ئی  کیا ہے؟ کون سی برا ئی  اللّٰہ عزوجل  کے نزدیک سب سے بڑی ہے؟

 ارشادفرمایا : برے اخلاق اور بُخْل ۔

عرض کی : اللّٰہ  تَعَالٰی  کے غَضَب کو کیا چیز ٹھنڈا کرتی ہے ؟

  ارشادفرمایا : چپکے چپکے صدقہ کرنااور صِلہ رحمی۔

عرض کی : کونسی چیز دوزخ کی آگ کو بجھاتی ہے؟   

 ارشادفرمایا : روزہ۔(جامع الاحادیث ، ۱۹/ ۴۰۵ ، حدیث  :  ۱۴۹۲۲)

       میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو !اس حدیث  کے راوی حضرتِ سیدنا ابوالعباس مُسْتَغْفِرِیعَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ القَوِی  کاشوقِ عِلْم مرحبا کہ ایک حدیث  سننے کے  لئے ایک سال کے روزے رکھنے کی مَدَنی فیس ادا کرنے پرتیار ہو گئے[1]؎ ، اس میں  اُن اسلامی بھائیو ں  کے  لئے دَرْس ہے جوفی زمانہ آسان مواقع میسر ہونے کے باوجود علمِ دین سیکھنے سے جی چُراتے ہیں  ۔

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !              صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

نصیحت وحکمت کے 25مَدَنی پھول

 



1     عیدالفطر کے دن اور۱۰،۱۱،۱۲ ،۱۳ ذوالحجۃ الحرام کو روزہ رکھنا مکروہ تحریمی ہے۔  (بہار شریعت ،۱/۹۶۷،دُرِّ مُخْتار وردالمحتار،۳/۳۹۱)

 

 



Total Pages: 32

Go To