Book Name:Murday ki Bebasi

جن

میں سانپ بھرے تھے جوپیٹوں کے باہر سے نظر آرہے تھے۔میں نے پوچھا: اے جبرئیل یہ کون لوگ ہیں ؟تو اُنہوں نے کہا:’’یہ سود کھانے والے ہیں۔‘‘

( ابنِ ماجہ ج۳ ص۷۱ حدیث ۲۲۷۳ )

36 بار زِنا سے بُرا

       اللہ عَزَّوَجَلَّ کے محبوب،دانائے غیوب ، مُنَزَّہٌ عَنِ الْعُیُوب صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کا ارشادِ عبرت بنیاد ہے:سود کا ایک دِرہم جان بوجھ کر کھانا چَھتِّیسمرتبہ زنا کرنے سے بھی زیادہ سخت اور بڑا گناہ ہے۔(سُنَنِ دار قُطْنی ج۳ ص۱۹حدیث۲۸۱۹)

جہنَّم کا توشہ

     حضرت سَیِّدُناعبداللہ ابنِ مسعود رضی اللہ تعالٰی عنہ سے رِوایت ہے کہ بندہ جو حرام مال کمائے گا اگرخرچ کرے گا تو اُس میں برکت نہ ہوگی اور اگر صَدَقہ کرے گا تو وہ مقبول نہیں ہوگااور اگر اُس کو اپنی پیٹھ کے پیچھے چھوڑ کر مرجائے گا تو وہ اُس کیلئے جہنَّم کا توشہ بن جائے گا۔(مُسندِ اِمام احمد ج۲ ص۳۴ حدیث۳۶۷۲)

    سود کی تباہ کاریوں اور اُس سے بچ کر تجارت وغیرہ کرنے کے طریقوں پر آگاہی حاصل کرنے کیلئے مکتبۃُ المدینہ کا مطبوعہ 92صفحات پر مشتمل رسالہ’’ سود اور اس کا علاج‘‘ ضرور پڑھئے، اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّ آپ کی آنکھیں کھل جائیں گی۔

 



Total Pages: 28

Go To