Book Name:Islam Ki Bunyadi Batain Part 03

باغِ طیبہ میں سُہانا پھول پھولا نور کا                                    مستِ بو ہیں بلبلیں پڑھتی ہیں کلمہ نور کا

بارہویں کے چاند کا مجرا ہے سجدہ نور کا                                 بارہ برجوں سے جھکا ایک اک ستارہ نور کا

میں گدا تو بادشاہ بھر دے پیالہ نور کا                                   نور دن دونا تِرا دے ڈال صدقہ نور کا

تاج والے دیکھ کر تیرا عمَامہ نور کا                                     سر جھکاتے ہیں الٰہی بول بالا نور کا

جو گدا دیکھو لیے جاتا ہے توڑا نور کا                                    نور کی سرکار ہے کیا اس میں توڑا نور کا

بھیک لے سرکار سے لا جلد کاسہ نور کا                                 ماہِ نو طیبہ میں بٹتا ہے مہینہ نور کا

تیری نسلِ پاک میں ہے بچّہ بچّہ نور کا                                  تو ہے عینِ نور تیرا سب گھرانا نور کا

نور کی سرکار سے پایا دو شالہ نور کا                                       ہو مبارک تم کو ذوالنّورین جوڑا نور کا

چاند جھک جاتا جدھر انگلی اٹھاتے مہد میں                             کیا ہی چلتا تھا اشاروں پر کِھلونا نور کا

اے رضاؔ یہ احمَدِ نوری کا فیض نور ہے                           ہوگئی میری غزل بڑھ کر قصیدہ نور کا

٭٭٭

مشکل الفاظ کے معانی:  باڑا (خیرات، بھیک) مجرا (سلام وآداب بجا لانا) توڑا عَزَّ وَجَلَّ  (تھیلا یعنی بوری بھر کر) توڑا 2 (کمی، قلت) کاسہ (کشکول) ماہِ نو (نیا چاند) دو شالہ (دوچادریں یعنی دو شہزادیاں ، حضرت سیدتنا رقیہ و اُمِّ کلثوم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُمَا) ذُوالنورین (دو نوروں والے،امیر المومنین حضرت سیدنا عثمان بن عفان رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ) مہد (گود، پنگھوڑا)

اَذکاراَسماءُ الحُسْنٰی

سوال …:          اَسمائے حُسنی سے کیا مراد ہے؟

جواب …:                                         اسمائے حسنی سے مراد اللہ  عَزَّ وَجَلَّ  کے وہ نام ہیں جن سے اللہ  عَزَّ وَجَلَّ  کو پکارنے کا حکم دیا گیا ہے۔ چنانچہ پارہ 9 سورۃُ الاعراف کی آیت نمبر 180میں ہے:  

وَ لِلّٰهِ الْاَسْمَآءُ الْحُسْنٰى فَادْعُوْهُ بِهَا۪                                     ترجمۂ کنز الایمان:   اور اللہ ہی کے ہیں بہت اچھے نام تو اسے ان سے پکارو۔

سوال …:           اسمائے حسنی کتنے ہیں ؟

جواب …:                                         اسمائے حسنی ہیں تو بہت زیادہ مگر مشہور 99 ہیں ۔

سوال …:           اسمائے حسنی کی کوئی فضیلت بتائیے؟

جواب …:                                         ہمارے پیارے آقا صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کا فرمانِ عالیشان ہے:  اللہ  عَزَّ وَجَلَّ  کے ننانوے  (99) اسمائے حسنیٰ ہیں جس نے یہ شمار کیے (یعنی یاد کر لیے) وہ جنت میں داخل ہو گا۔ )[1](

سوال …:           کیا یہ اسمائے حسنیٰ قرآنِ مجید میں بھی ہیں ؟

جواب …:                                         جی ہاں !  اللہ  عَزَّ وَجَلَّ  کے یہ ذاتی و صفاتی نام قرآنِ کریم کی مختلف سورتوں میں موجود ہیں ۔

سوال …:           اسمائے حسنیٰ کون سے ہیں ؟

جواب …:                                         اسمائے حسنیٰ یہ ہیں :  

هُوَ اللّٰهُ الَّذِیْ لَاۤ اِلٰـهَ اِلَّا هُوَ

اَلرَّحْمٰنُ (بڑا مہربان)

اَلرَّحِيْمُ  (نہایت رحم والا)

اَلْـمَلِكُ (بادشاہِ حقیقی)

اَلْـقُدُّوْسُ (ہر عیب سے پاک)

اَلسَّلَامُ (سلامت رکھنے والا)

اَلْـمُؤْمِنُ (امن دینے والا)

اَلْـمُهَيْمِنُ (نگہبان)

اَلْعَزِيْزُ (سب سے غالب)

اَلْـجَبَّارُ (ٹوٹے دلوں کو جوڑنے والا)

اَلْـمُتَكَبِّرُ (بڑائی والا)

اَلْـخَالِـقُ (پیدا کرنے والا)

اَلْـبَارِئُ (پیدا کرنے والا)

اَلْـمُصَوِّرُ (صورت بنانے والا)

اَلْـغَفَّارُ (بخشنے والا)

اَلْـقَھَّارُ  (سب سے طاقتور)

اَلْـوَهَّابُ (بہت دینے والا)

اَلرَّزَّاقُ (رزق دینے والا)

اَلْـفَتَّاحُ (کھولنے والا)

اَلْـعَلِيْمُ (جاننے والا)

اَلْـقَابِضُ  (بند کرنے والا)

اَلْـبَاسِطُ (کشادہ کرنے والا)

اَلْـخَافِضُ (پست کرنے والا)