Book Name:Fatawa Razawiyya jild 20

 

 

 

 

 

 

کتاب المزارعۃ

(مزارعت کا بیان)

 

مسئلہ ۴۶ تا۴۹:                      مسئولہ محمد مبارك الله از پیلسپانہ ضلع مرادآباد                           ۲۶ رجب ۱۳۲۹ھ

(۱)شرع شریف کے نزدیك کا شتکار کوئی حق موروثیت جیسے قانون انگریزی کے اندر ہے کہ جو شخص بارہ سال سے زائد ایك زمین کو کاشت کرے تو زمیندار کو پھر کوئی مجاز بیدخلی وغیرہ کا نہیں رہتا،حاصل ہے یا نہیں؟ اگر ہے تو خیر اور حق۔

(۲)نہیں تو یہ کاشتکار حلف تلف اور مظالم ہے یانہیں؟

(۳)اور اس وقت یہ کاشتکار جو زمین کو نہیں چھوڑتا ہے،اور لگان حیثیت زمین سے کم دیتاہے،اور زمیندار بحیثیت قانون انگریزی دعوٰی سے مجبور ہے،تو یہ کاشکتار متبع قانون انگریز ی کا اور مقدم ومرجح قانون کاحکم شریعت پر ہے یا نہیں؟ اور اگر ہے تو اس کا کیاحکم ہے؟ اور یہ ظالم اور زمیندار مظلوم ہوایا نہیں؟

(۴)اور اگر کوئی زمیندار بعد انکار کاشتکار کے دعوٰی بے دخلی مجبورا دائر کرے تو صرف اس کا جو کچھ کچہری میں ہوا اس کے لینے کا مستحق ہے یانہیں؟

الجواب:

مجرد مرور مدت سے کچھ نہیں ہوتا اگرچہ بیس برس کاشت کرے،جب مدت اجارہ ختم ہوگئی شرعًا


 

 



Total Pages: 630

Go To