We have moved all non-book items like Speeches, Madani Pearls, Pamphlets, Catalogs etc. in "Pamphlet Library"

Book Name:Fatawa Razawiyya jild 15

بسم الله الرحمن الرحیم ط

 

کتابُ السِّیرَ

(حصّہ دوم)

 

مسئلہ ۱:                    از شہر مسئولہ محمد خلیل الدین احمد صاحب                    ۱۶ محرم ۱۳۳۹ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین ا س مسئلہ میں کہ زید نے کہا کہ ایک ہندی مہاجر مدنی کی اہلیہ افغانی النسل مدنی بی بی صاحبہ ہندوستان تشریف لائی ہیں،وہ تعزیوں وغیرہ کے حالات سن کر فرماتی ہیں کہ ہندیوں نے یہ اسلامی بت بنائے ہیں،ا س کو سن کر خالد نے نہایت غضبناک ہوکر کہا تعزیوں کو بت کہنے والا خودکافرہے اگرچہ عالم ہو۔

الجواب:

تعزئےناجائز ضرور ہیں مگر ان کو بت کہنا زیادت وغلو ہے،مسلمان ان کی پرستش نہیں کرتے،اورجس نے وہ کلمہ کہا کہ"بت کہنے والا خود کافرہے اگر چہ عالم ہو"اس نے اس سے بھی ہزار درجے بدتر کہی سخت سزا کا مستحق ہے بلکہ توہین علماء کے سبب اس پر تجدید اسلام ونکاح لازم ہے۔والله تعالٰی اعلم۔

مسئلہ ۲:                  از شہر مسئولہ محمد خلیل الدین احمد صاحب                    ۱۶ محرم ۱۳۳۹ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے اسلام اس مسئلہ میں کہ عمرو نے کہا تفضیلیہ کے پیچھے ہم نماز نہیں پڑھیں گے،بکر یہ سن طیش میں آگیا اور کہا ہم تو تفضیلیہ ہیں ہم کو دوسروں (غیر تفضیلیہ)سے کیا مطلب اگر وہ دوخدا کہیں تو ہم نہیں مانتے اگر وہ گوہ کھائیں تو ہم نہیں کھاسکتے،اسطرح عالم اہل سنت وجماعت پر کنایۃ تبرا کہا اوریہ بھی کہا کہ ہم خارجی کونماز نہیں پڑھانے دیں گے،(مسجد کا امام ایک سید اہلسنت وجماعت ہے)اس طرح اہلسنت وجماعت کو خارجی کہا،

الجواب:

تفضیلیہ گمراہ ہیں اور علماء کی توہین راہ جہنم ہے اور اہلسنت کوخارجی کہنا رافضیوں کا شعارہے،والله تعالٰی اعلم۔

مسئلہ ۳تا۷:                           ازشہر کہنہ محلہ کوٹ مسئولہ عنایت الله خاں                                یکم صفر ۱۳۳۹ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ۱جو شخص کہے رسول الله صلی الله تعالی علیہ وسلم کو علم غیب نہ تھا اور۲معراج جسمانی نہ ہوئی اور۳جملہ شہداء واولیاء الله وبزرگان دین کی نیاز ونذر کرنا حرام