Book Name:Fatawa Razawiyya jild 9

 

 

 

رسالہ

اِتْیَانُ الْاَرْوَاح لِدِیَارِھَمْ بَعْدَ الرَّوَاح ۱۳۲۱ھ

(روحوں کا بعد وفات اپنے گھر آنا)

 

بسم اﷲ الرّحمن الرحیم

مسئلہ ٢٦٠:             ١٣ شعبان المعظم ١٣٢١ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین وشرع متین اس مسئلہ میں کہ جس وقت سے روح انسا ن کی جسم سے پرواز کرتی ہے بعد اس کے پھر بھی اپنے مکان پر آتی ہے یا نہیں؟ اور اس سے کچھ ثواب کی خواستگار خواہ قرآن مجید یا خیرات وغیرہ طعام ہو یا روپیہ پیسہ ہوتی ہے یا نہیں؟ اور کون کون دن روح اپنے مکان پر آیا کرتی ہے؟ اور اگر آتی ہے تو منکر اس کا گنہگار ہے یا نہیں؟ اور اگر ہے تو کس گناہ میں شامل ہے؟ بینوا توجروا

الجواب:

خاتمۃ المحدثین شیخ محقق مولٰنا عبدالحق محدث دہلوی رحمۃ اﷲ تعالٰی علیہ شرح مشکوٰۃ شریف باب زیارۃ القبور میں فرماتے ہیں:

میّت کے دنیا سے جانے کے بعد سات دن تک اس کی طرف سے صدقہ کرنا مستحب ہے۔ میّت کی طرف سے

مستحب است کہ تصدق کردہ شوداز میّت بعد از رفتن اواز عالم تا ہفت روز تصدق ازمیّت نفع

 


 

 



Total Pages: 948

Go To