Book Name:Fatawa Razawiyya jild 6

 

 

 

رسالہ
نِعم الزّاد لِرَوم الضاد
(ضاد پڑھنے کا بہترین طریقہ)

 

_______   بسم اﷲ الرحمٰن الرحیم   _______

مسئلہ نمبر ٤٧٢تا ٤٧٦ : ازریاست رام پور محلہ کنڈہ متصل مسجد میاں گاماں مرسلہ مولوی محمد یحیٰی صاحب ٢٤شوال ١٣١٥ھ

چہ مے فرمایند علمائے دین ومفتیان شرع متین دریں باب کہ در قراء ت غیر المغضوب علیہم ولاالضآلین درچند اشخاص نزاع مے مانندواکثر رسائل وفتاوٰی دریں باب مختلف ہستند بعضے خواندن ضاد را بدال توراث بین الناس دلیل مے آرند و بعضے برائے تبدیل ظا و زا تشابہ صورت رادلیل مے گردانند وقاری عبدالرحمان مرحوم پانی پتی دررسائل و فتاوٰی خلاصہ تحقیق بدیں نہج رقم کردہ اند کہ بجائے ضاد دال یاحرف خواندن محض غلط است ہر حرف خصوصًا ضادرا ازمخرج خود مع صفاتش اداکردن برہمہ شخص واجب است دریں ہنگام شور و شغب

علمائے شرع متین اس بارے میں کیافرماتے ہیں کہ غیرالمغضوب علیھم ولا الضآلین کے پڑھنے میں کچھ لوگوں کا اختلاف ہے اکثر رسائل و فتاوے اس بارے میں مختلف ہیں بعض لوگ توارث بین الناس (معمول) کو دلیل بناتے ہوئے ضاد کو دال کے ساتھ پڑھنے کا کہتے ہیں اور بعض اسے ظا اور زا کے ساتھ تبدیلی کے قائل ہیں اور آواز میں مشابہ ہونے کی دلیل پیش کرتے ہیں قاری عبدارحمان مرحوم پانی پتی نے کہا کہ رسائل اور فتاوٰی میں اس بارے میں خلاصہ تحقیق یوں بیان کیا گیا ہے کہ ضاد کی جگہ دال یا کوئی

 


 

 



Total Pages: 736

Go To