Book Name:Jame Ul Ahadees Jild 1

       پھر یہ مطلب بھی نہیں کہ علی الاطلاق ان ددنوں کتابوں کی احادیث صحیح ہیں اور ان میںکوئی  حدیث ضعیف نہیں ۔یا کسی نے کبھی کوئی جرح کی ہی نہیں۔  بلکہ صحت کا حکم باعتبار اغلب ہے۔ اور یہ  مطلب بھی نہیں کہ  انکے علاوہ دوسری احادیث  صحت کے مرتبہ کو  نہیں  پہونچیں،  بلکہ  واقعہ یہ ہے کہ صحیح احادیث کا بڑا ذخیرہ ان کتابوں  سے رہ گیا  ہے۔  خاص طور پر مستدرک  اور مستخرج  احادیث سے ان پر اضافہ کتب حدیث میں منقول  اور صحاح کی  دوسری کتابوں میں کثیر احادیث اسی مرتبہ کی منقول  و ما ثور ہیں ۔

        صحاح ستہ  سے مراد وہ چھ کتابیں ہیں  جن پر امت مسلمہ  کا خاص اعتبار و اعتماد  اور عمل رہا ہے۔ پانچ تو متفق علیہ ہیں۔

 Xبخاری       Xمسلم             Xنسائی              Xابو داؤد     Xترمذی

       اور اکثر  کے نزدیک  چھٹی ابن ماجہ ہے لیکن بعض نے مؤطا امام مالک کو قرار دیا ہے۔

 صحت  کے  مراتب مختلف ہیں جو  مندرجہ ذیل ہیں:۔

۱۔     وہ حدیث جو صحیحین میں ہو ۔

۲۔     وہ حدیث جو  صرف  بخاری میں ہو۔

۳۔    وہ حدیث جو صرف مسلم  میں ہو۔

۴۔     وہ حدیث  جو شیخین کی شرط پر ہو۔

۵۔    وہ حدیث جو صرف بخاری کی شرط پر ہو۔

۶۔     وہ حدیث جو صرف مسلم کی شرط پر ہو۔

۷۔      وہ حدیث جس کو  دوسرے ائمہ و  محدثین  نے  صحیح قرار  دیا ہو۔

        لیکن  یہ ترتیب  قطعی و لازمی  نہیں  بلکہ معاملہ کبھی اس کے برعکس  بھی ہو تا ہے۔

 حسن لذاتہ

 تعریف:۔ صحیح کے تمام شرائط کے ساتھ منقول  ہو لیکن ضبط  میں کچھ کمزوری ہو۔

 حکم :۔ صحیح سے کچھ کم مرتبہ  رکھتی ہے لیکن قابل احتجاج اور واجب العمل ہے۔

 



Total Pages: 604

Go To