Book Name:Jame Ul Ahadees Jild 1

اساتذہ ۔آپکے اساتذہ کی فہرست نہایت طویل ہے ،مندرجہ بالا کے علاوہ چند اسماء یہ ہیں ۔

       محمد بن عبداللہ بن نمیر ،ابراہیم بن المنذرالخرامی ، عبداللہ بن معاویہ ھشام بن عمار ، ابوبکر بن ابی شیبہ  ،محمد بن یحیی نیشاپوری ،احمد بن ثابت الجحدری ،ابوبکر بن خلادباہلی ،محمد بن

بشار ،علی بن منذر ۔وغیرہم

 تلامذہ: ۔آپکے تلامذہ میں بعض کے اسماء اس طرح ہیں :۔

        علی بن سعید عسکری ،احمد بن ابراہیم قزوینی ، ابوالطیب احمد بن روح شعرانی ،اسحاق بن محمد قزوینی ،ابراہیم بن دینار الجرشی الصمدانی ،حسین بن علی بن برانیاد ،سلیمان بن یزید قزوینی ،

حکیم مدنی اصبہانی ،وغیرہم

 علم  وفضل ۔امام ابن ماجہ کی امامت فن ،فضل وکمال ،جلالت شان ،وسعت نظر اور حفظ حدیث

وثقاہت کے تمام علماء معترف ہیں ۔

       ابو یعلی خلیلی لکھتے ہیں :۔

       ابن ماجہ بڑے ثقہ ،متفق علیہ ، قابل احتجاج ہیں ، آپکو حدیث اور حفظ حدیث میں پوری

معرفت حاصل ہے ۔

       علامہ ابن جوزی کہتے ہیں ۔

       آپ نے بہت سے شیوخ سے سماع حدیث کیا ،اور سنن ،تاریخ اور تفسیرکے آپ عارف تھے ۔

       علامہ ذھبی فرماتے ہیں:۔

       بیشک آپ حافظ حدیث ،صدوق اوروافرالعلم تھے ۔

       مورخ ابن خلکان نے لکھا :۔

        آپ حدیث کے امام اور حدیث کے جمیع  متعلقات سے واقف تھے ۔

وصال :۔۲۲؍رمضان المبارک ۲۷۳ھ بروز پیر آپ کا وصال ہوا ، چونسٹھ سال کی عمر پائی ۔ آپکے بھائی ابوبکر نے نماز جنازہ پڑھائی ،دسرے دن تدفین عمل میں آئی ۔

 



Total Pages: 604

Go To