Book Name:Jame Ul Ahadees Jild 1

دیر نہیں لگتی ۔جیسا کہ شیخ ابن حجر مکی رحمۃ اللہ علیہ فرماتے

ہیں ۔

       اعلم انہ لم یزل العلماء وذوالحاجات یزورون قبرہ ویتوسلون عندہ فی

قضاء حوائجھم ویرون نحج ذلک منھم الا مام الشافعی رحمۃ اللہ علیہ انتھی ۔

        یعنی جان لے کہ علماء و اصحاب حاجات امام صاحب کی قبر کی زیارت کرتے رہے اور قضاء حاجات کیلئے آپ کو وسیلہ پکڑتے رہے اور ان حاجتوں کاپوراہونا دیکھتے رہے ہیں ۔ان

علماء میں سے امام شافعی رحمۃ اللہ علیہ بھی ہیں ۔

       سلطان الپ ارسلاں سلجوقی نے ۴۵۹ھ میں مزار پاک پرایک عالیشان قبہ بنوایا اوراسکے قریب ہی ایک مدرسہ بھی بنوایا ۔یہ بغداد کاپہلا مدرسہ تھا ۔نہایت شاندار لاجواب عمارت بنوائی ۔اس کے افتتاح کے موقع پر بغداد کے تمام علماء وعمائد کو مدعو کیا ۔یہ  مدرسہ ’’مشہد ابو حنیفہ ‘‘  کے نام سے مشہور ہے ۔مدت تک قائم رہا ۔اس مدرسہ سے متعلق ایک مسافر خانہ بھی تھا ،جس میں قیام کرنے والوں کوعلاوہ اور سہولتوں کے کھانا بھی ملتا تھا ۔بغداد کا مشہور دارالعلوم نظامیہ اس کے بعد قائم ہوا ۔حضرت امام کا وصال نوے سال کی عمر میں شعبان کی دوسری تاریخ

کو ۱۵۰ھ میں ہوا ۔

 

  امام  المسلمین ابو حنیفہ

              از:۔    حضرت  امام  عبد اللہ  بن مبارک رضی اللہ تعالیٰ عنہ

 

 

                                   لقد  زان البلاد و من علیہا         ٭     امام المسلمین  ابوحنیفہ        

         با حکام وآ ثار و فقہ ٭     کا یات الزبور علی صحیفہ

        فما فی  المشرقین لہ نظیر      ٭     ولا فی المغربین  ولا بکوفہ

       یبیت مشمرا سہر اللیالی     ٭     وصام نہارہ  للہ   خیفہ

 



Total Pages: 604

Go To