Book Name:Mahboob e Attar ki 122 Hikayaat

(۳۹) مسجِد کا ادب

          مدینۃ الاولیاء احمد آباد(الھند)کے اسلامی بھائی محمد امتیاز عطاری کے بیان کا لبِّ لباب ہے کہ جب حاجی زم زم رضا عطاری علیہ رحمۃُ اللہِ الباری احمد آباد مَدَنی انعامات کے حوالے سے ہماری تربیّت کے لئے تشریف لائے تھے تو ہم نے ان سے ایک بات یہ بھی سیکھی کہ جب آپ رحمۃُ اللہ تعالٰی علیہ مسجد میں نماز ادا کرتے تو تازہ وضو کرنے کی صورت میں اپنی کتھئی چادر اس جگہ رکھتے جہاں سجدے میں داڑھی آتی ہے اور فرماتے کہ وضو کے بعد ہاتھ منہ صاف کرنے کے بعد بھی بعض اوقات داڑھی سے پانی کے قطرے ٹپکتے ہیں جبکہ فرشِ مسجد پر وضو کے قطرے ٹپکا نا مکروہِ تحریمی ہے، اب اگر وضو کے قطرے دورانِ نماز چادر پر گریں گے تومسجد کا ادب برقرار رہے گا۔ اللہ عَزَّوَجَلَّ  ہمارے حاجی زم زم رضا عطاری علیہ رحمۃُ اللہِ الباری کے درجات کو بلند فرمائے اور ان کے صدقے ہماری بھی مغفِرت فرمائے۔ اٰمِین بِجاہِ النَّبِیِّ الْامین صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                                                                                                                 صلَّی اللہُ تعالٰی علٰی محمَّد

(۴۰)نیلے رنگ کا لوٹا استِعمال نہیں کرتے تھے

          ایک مَدَنی اسلامی بھائی ابو واصف عطّاری کا بیان ہے کہ میں نے اپنے مکتب کے استنجا خانے کے لئے بازار سے بڑے سائز کا لوٹا منگوایا تو سمجھانے کے باوُجُود لانے والا نیلے رنگ کا لوٹا لے آیا اور بتایا کہ اس سائز میں صِرْف یِہی رنگ

 



Total Pages: 208

Go To