Book Name:Mahboob e Attar ki 122 Hikayaat

شدید زخمی حالت میں نماز

          حاجی زم زم علیہ رَحمَۃُ اللہ الاکرم کا بیماری کے عالَم میں بھی نماز کی پابندی کرنا ہمیں ہمارے اکابرین  رَحِمَہُمُ اللہُ المُبِینکی یاد دلاتا ہے ،تندرستی ہویا بیماری ، بُزُ رگانِ دین رَحِمَہُمُ اللہُ المُبِیننماز کی پابندی کیا کرتے تھے چنانچہ جب حضرت سیدنا عمر فاروق اعظم رضی اللہ تعالیٰ عنہ پر قاتلانہ حملہ ہوا تو عرض کی گئی، اے امیرالْمؤمنین ! نماز( کا وقت ہے) فرمایا :’’جی ہاں ، سنئے! جو شخص نماز کو ضائع کرتا ہے اس کا اسلام میں کوئی حصہ نہیں۔‘‘ پھر حضرت سیدنا عمر فاروق رضی اللہ تعالی عنہ نے شدید زخمی ہونے کے باوجودنماز ادا فرمائی۔  (کتاب الکبائرص ۲۲) اللہ     عَزَّوَجَلَّ کی اُن پر رَحمت ہو اور ان کے صَدقے ہماری بے حساب مغفِرت ہو۔  امین بِجاہِ النَّبِیِّ الْاَمین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وسلَّم

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                                                صلَّی اللہُ تعالٰی علٰی محمَّد

تَیَمُّم کا اِنتظام کر لیجئے

        میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو!اگرکبھی داخلِ اسپتال ہونے کی نوبت آئے تو نماز ہرگز نہ چھوڑی جائے ،محبوبِ عطّارکی پیروی میں ضَرورتاً تیمُّم کے لئے اینٹ یا کوری مٹّی کی پلیٹ وغیرہ ساتھ لے لی جائے ،نیز’’نمازکے احکام‘‘(مطبوعہ مکتبۃ المدینہ)بھی ساتھ ہوتاکہ تیمُّم کا طریقہ اورسخت بیماری میں اشارے سے نماز پڑھنے

 



Total Pages: 208

Go To