Book Name:Mahboob e Attar ki 122 Hikayaat

قافلے میں سفر کے لئے جاتے تو نماز کی تاکید کرکے جاتے اور سفر کے دوران بھی S.M.S. کے ذَرِیعے معلومات کرتے کہ نماز ادا کرلی ہے یا نہیں ؟ بیماری کی حالت میں بھی اپنے بڑے شہزادے سے فرمایا: ’’جیسے ہی میری طبیعت بحال ہو ئی اِنْ شَآءَ اللہ عَزَّ  وَجَلَّ   ہم دونوں مَدَنی قافلے میں سفر کریں گے ۔‘‘ شہزادے کو موبائل لے کر دینے سے منع کرتے ہوئے ذِہْن بنایا کہ چُونکہ باپا (یعنی امیرِ اہلسنّت دامت برکاتہم العالیہ)نے بچّوں کو موبائل لے کر دینے سے منع فرمایا ہے اس لئے میں آپ کو موبائل لے کر نہیں دوں گا۔

اللہ     عَزَّوَجَلَّ کی اُن پر رَحمت ہو اور ان کے صَدقے ہماری بے حساب مغفِرت ہو۔  امین بِجاہِ النَّبِیِّ الْاَمین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وسلَّم

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                      صلَّی اللہُ تعالٰی علٰی محمَّد

تربیت اولاد کی اہمیت

          میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو!آپ نے دیکھا کہ محبوبِ عطار عَلَیْہِ رَحمَۃُاللہ الغفّار کو اپنی اولاد کی مَدَنی تربیت کا کیسا جذبہ تھا۔ یقینا نیک اولاد اللہ  تبارک وتعالیٰ کا عظیم انعام ہے کیونکہ یہ دنیا میں اپنے والدین کے لئے راحت ِ جان اور آنکھوں کی ٹھنڈک کاسامان بنتی ہے ۔بچپن میں ان کے دل کا سرور ، جوانی میں آنکھوں کا نور اوروالدین کے بوڑھے ہوجانے پر ان کی خدمت کرکے ان کا سہارا بنتی ہے ۔ پھر جب یہ والدین دنیا سے گزرجاتے ہیں تویہ سعادت منداولاد اپنے والدین کے لئے بخشش کا سامان

 



Total Pages: 208

Go To