Book Name:Qoot ul Quloob Jild 1

الْمَیِّتَ مِنَ الْحَیِّ وَ یُحْیِ الْاَرْضَ بَعْدَ مَوْتِهَاؕ-وَ كَذٰلِكَ تُخْرَجُوْنَ۠ (۱۹)  (پ۲۱،  الروم:  ۱۷ تا ۱۹)

تر جمعہ ٔ کنز الایمان: تو اللہکی پاکی بولو جب شام کرو اور جب صبح ہو اور اسی کی تعریف ہے آسمانوں   اور زمین میں   اور کچھ دن رہے اور جب تمہیں   دوپہر ہو۔ وہ زندہ کو نکالتا ہے مردے سے  اور مردے کو نکالتا ہے زندہ سے  اور زمین کو جِلاتا  (سرسبز و شاداب کرتا)  ہے اس کے مَرے پیچھے اور یوں   ہی تم نکالے جاؤ گے۔

 (14) جو روزانہ 50مرتبہ تمام مومن مردوں   اور عورتوں   کے لئے مغفرت طلب کرے یعنی صبح و شام 25،  25 مرتبہ استغفار پڑھے۔ اسے  ابدالوں   میں   لکھ لیاجاتا ہے،   کہ اس کی فضیلت حدیثِ پاک میں   آئی ہے۔ چنانچہ حدیثِ پاک میں   مروی الفاظ یہ ہیں  :  (اَللّٰہُمَّ اغْفِرْ لِلْمُؤْمِنِیْنَ وَالْمُؤْمِنَاتِ وَالْمُسْلِمِیْنَ وَالْمُسْلِمَاتِ،   حَیِّہِمْ وَمَیِّتِہِمْ،   شَاھِدِھِمْ وَغَآئِبِہِمْ،   قَرِیْبِہِمْ وَبَعِیْدِھِمْ،   اِنَّكَ تَعْلَمُ مُنْقَلَبَہُمْ وَمَثْوَاھُمْ)   ([1])

تر جمعہ : اے اللہ عَزَّ وَجَلَّ! بخش دے تمام مومن مردوں   اور عورتوں   کو،   تمام مسلمان مردوں   اور عورتوں   کو،   ان کے زندوں   اور مُردوں   کو،   ان کے حاضر اور غائب افراد کو،   ان کے قریبی اور دور کے عزیزوں   کو،   بے شک  تو ان کے انجام اور ٹھکانے سے  آگاہ ہے۔

 (15) یہ استغفار ہر 10بار پڑھنے کے بعد یہ دعا مانگیں  :  

 (اَللّٰہُمَّ اصْلِحْ اُمَّۃَ مُحَمَّدٍ،   اَللّٰہُمَّ ارْحَمْ اُمَّۃَ مُحَمَّدٍ،   اَللّٰہُمَّ فَرِّجْ عَنْ اُمَّۃِ مُحَمَّدٍ صَلَّی اللّٰہُ عَلَیْہِ وَسَلَّمَ)  

تر جمعہ : اے اللہ عَزَّ وَجَلَّ! حضرت سیِّدُنا محمد صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کی امت کی اصلاح فرما ،   اے اللہ عَزَّ وَجَلَّ! حضرت سیِّدُنا محمدصَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کی امت پر رحم فرما،   اے اللہ عَزَّ وَجَلَّ! حضرت سیِّدُنا محمد صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کی امت سے  مصیبتیں   دور فرما۔

            منقول ہے کہ جو روزانہ یہ کلمات پڑھا کرے اس کے لئے ایک ابدال کے برابر ثواب لکھا جاتا ہے۔  ([2])

شکرانۂ نعمت: 

 (16) جو صبح و شام یہ کلمات تین تین مرتبہ پڑھے اسنے اللہ عَزَّ وَجَلَّکی نعمتوں   کا شکر ادا کر دیا:

 (اَللّٰہُمَّ اَنْتَ خَلَقْتَنِیْ وَاَنْتَ ھَدَیْتَنِیْ وَاَنْتَ تُطْعِمُنِیْ وَاَنْتَ تَسْقِیْنِیْ وَاَنْتَ تُمِیْتُنِیْ وَاَنْتَ تُحْیِیْنِیْ وَاَنْتَ رَبِّیْ لَا رَبَّ لِیْ سِوَاكَ وَ لَاۤ اِلٰـہَ اِلَّا ۤ اَنْتَ وَحْدَكَ لَا شَرِیْكَ لَكَ)   ([3])

تر جمعہ : اے اللہ عَزَّ وَجَلَّ! تونے مجھے پیدا کیا اور تونے ہی مجھے ہدایت دی،   تو ہی مجھے کھلاتا ہے اور تو ہی مجھے پلاتا ہے،   تو ہی مجھے مارے گا اور تو ہی زندہ کرے گا اور تو ہی میرا ربّ ہے تیرے سوا میرا کوئی ربّ نہیں   اور تیرے سوا کوئی معبود بھی نہیں  ،   تو اکیلاہے کوئی تیرا شریک نہیں  ۔

شیطان سے  حفاظت کی دعا: 

 (17)  (بِسْمِ اللّٰہِ،   مَا شَآءَ اللّٰہُ،   وَلَا قُوَّۃَ اِلَّا بِاللّٰہِ،   مَا شَآءَ اللّٰہُ،   کُلُّ نِعْمَۃٍ مِّنَ اللّٰہِ،   مَا شَآءَ اللّٰہُ،   اَلْخَیْرُ کُلُّہُ بِیَدِ اللّٰہِ عَزَّوَجَلَّ،   مَا شَآءَ اللّٰہُ،   لَا یُصْرِفُ السُّوْٓءَ اِلَّا اللّٰہُ)   ([4])

تر جمعہ : اللہ عَزَّ وَجَلَّکے اسمِ مبارک سے ،   اللہ عَزَّ وَجَلَّجو چاہے،   اللہ عَزَّ وَجَلَّکے بغیر نیکی کرنے کی قوت نہیں  ،   اللہ عَزَّ وَجَلَّجو چاہے،   ہر نعمت اللہ عَزَّ وَجَلَّہی کی جانب سے  ہے،   اللہ عَزَّ وَجَلَّجو چاہے،   ہر قسم کی خیر وبھلائی اللہ عَزَّ وَجَلَّکے قبضۂ قدرت میں   ہے،   اللہ عَزَّ وَجَلَّجو چاہے،   اللہ عَزَّ وَجَلَّکے سوا کوئی بھی برائی دور نہیں   کر سکتا۔

            جو کوئی ہمیشہ بیدار ہوتے اور سوتے وقت یہ کلمات پڑھتا ہے اللہ عَزَّ وَجَلَّکی حفاظت میں   ہوتا ہے اور شیطان سے  محفوظ رہتا ہے۔ چنانچہ حدیثِ پاک میں   ہے کہ جو کوئی یہ کلمات عرفہ کے دن 100مرتبہ سورج غروب ہونے سے  پہلے پڑھے اللہ عَزَّ وَجَلَّاسے  عرش سے  ندا دیتا ہے:  ’’ تونے مجھے راضی کر دیا ہے اور میرے ذمۂ  کرم پر تیری رضا ہے،   مجھ سے  جو چاہے مانگ،   میں   تجھے عطا کروں   گا۔ ‘‘   ([5])

صبح و شام کی دعا:

 (18) روزانہ صبح و شام سات مرتبہ یہ دعا پڑھیں  :

 (فَاِنْ تَوَلَّوْا فَقُلْ حَسْبِیَ اللّٰہُ لَاۤ اِلٰـہَ اِلَّا ھُوَ عَلَیْہِ تَوَکَّلْتُ وَھُوَ رَبُّ الْعَرْشِ الْعَظِیْمِ)  

تر جمعہ : پھر اگر وہ منہ پھیریں   تو تم فرما دو کہ مجھے اللہ کافی ہے،   اسکے سوا کسی کی بندگی نہیں  ،   میں  نے اسی پر بھروسا کیا اور وہ بڑے عرش کا مالک ہے۔

اذان کے بعد کی ایک دعا: 

 (19) سات مرتبہ اللہ عَزَّ وَجَلَّسے  جنت کا سوال کریں   اور دوزخ سے  پناہ مانگیں   اور جب بھی اذان سنیں   تو ویسا ہی کہیں   جیسا مؤذّن کہتا ہے،   پھر اذان کے بعد یہ دعا پڑھیں  :

 (رَضِیْتُ بِاللّٰہِ عَزَّوَجَلَّ رَبًّا وَّبِالْاِسْلَامِ دِیْنًا وَّبِمُحَمَّدٍ صَلَّی اللّٰہُ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نَبِیا اَللّٰہُمَّ بِہٰذِہِ الدَّعْوَۃِ التَّآمَّۃِ وَالْکَلِمَۃِ الصَّادِقَۃِ وَالصَّلَاۃِ الْقَآئِمَۃِ صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَاٰلِہٖ،   وَاَعْطِہِ الْوَسِیلَۃَ وَالْفَضِیلَۃَ وَابْعَثْہُ



[1]     المصنف لابن ابی شیبة، کتاب الدعاء، باب ما یدعی به فی الصلاة علی الجنائز، الحدیث: ۱۱، ج۷، ص۱۲۶مختصراً

[2]     ذیل تاریخ بغداد لابن النجار، الحدیث: ۷۹۸، ج۱۸، ص۲۲۳بتغیر حلیة الاولیاء، الرقم ۴۳۸ معروف الکرخی، الحدیث:۱۲۷۱۶، ج۸، ص۴۱۰

[3]     المعجم الاوسط، الحدیث: ۱۰۲۸، ج۱، ص۲۹۱ بدون ’’وانت ربی لا ربّ لی     الخ‘‘

[4]     کتاب الضعفاء للعقیلی، الرقم ۲۷۳ الحسن بن رزین بصری، ج۱،ص۲۴۴

[5]     المتفق والمفترق للخطیب، الحدیث: ۷۷، ج۱، ص۱۵۸     الکامل فی ضعفاء الرجال، الرقم ۴۶۲ الحسن بن رزین، ج۳، ص

Total Pages: 332

Go To