Book Name:Saboot e Hilal kay Tariqay

چاند کے شرعی ثبوت کے متعلق بے مثال تحقیقی شاہکار

 

طرق إثبات الہلال

 

مصنف :  اعلیٰ حضرت، امام اہلسنت امام احمد رضا خان عَلَیْہِ رَحْمَۃُ الرَّحْمٰن

کی تسہیل وتخریج بنام

 

 

ثبوتِ ہلال کے طریقے

 

پیشکش

مجلس :   المدینۃ العلمیۃ (دعوت ِاسلامی)

شعبۂ کتب ِاعلیٰ حضرت  رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہِ

ناشر

مکتبۃ المدینہ، باب المدینہ کراچی

 

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

’’چاند دیکھ کر عید کرو ‘‘  کے سولہ حُروف کی نسبت سے اس کتاب کو پڑھنے کی ’’16 نیّتیں   ‘‘

 فرمانِ مصطفی صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  :    نِیَّۃُ الْمُؤْمِنِ خَیْرٌ مِّنْ عَمَلِہٖ مسلمان کی نیّت اس کے عمل سے بہتر ہے ۔(’’المعجم الکبیر‘‘ للطبرانی، الحدیث : ۵۹۴۲، ج۶، ص۱۸۵، داراحیاء التراث العربی بیروت)

 دو مَدَنی پھول :

 {1}  بِغیر اچّھی نیّت کے کسی بھی عملِ خیر کا ثواب نہیں   ملتا۔

{2}جتنی اچّھی نیّتیں   زِیادہ، اُتنا ثواب بھی زِیادہ۔

                 {1}رِضائے الٰہی عَزَّوَجَلَّکیلئے اس کتاب کا اوّل تا آخِر مطالَعہ کروں   گا {2} حتَّی الْوُسْعْ اِس کا باوُضُو اور {3}قِبلہ رُو مُطالَعَہ کروں   گا{4} قرآنی آیات اور {5}اَحادیثِ مبارَکہ کی زِیارت کروں   گا{6}جہاں   جہاں   ’’اللہ‘‘ کا نام پاک آئے گا وہاں   عَزَّوَجَلَّ  اور{7} جہاں   جہاں   ’’سرکار‘‘کا اِسْمِ مبارَک آئے گا وہاں   صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ پڑھوں  گا {8} اس روایت ’’عِنْدَ ذِکْرِ الصَّالِحِیْنَ تَنَزَّلُ الرَّحْمَۃُ یعنی نیک لوگوں   کے ذکر کے وقت رحمت نازل ہوتی ہے ۔‘‘(حلیۃ الاولیاء، حدیث : ۱۰۷۵۰، ج۷، ص۳۳۵، دارالکتب العلمیۃ بیروت) پر عمل کرتے ہوئے اس کتاب میں   دیئے گئے بُزُرْگانِ دین کے واقِعات دوسروں   کو سنا کر ذکرِ صالحین کی بَرَکتیں   لُوٹوں   گا {9})اپنے ذاتی نسخے پر(’’یادداشت‘‘ والے صفحہ پر ضَروری نِکات لکھوں   گا{10})اپنے ذاتی نسخے پر) عِندَ الضَّرورت خاص خاص مقامات پر انڈر لائن کروں   گا {10} کتاب مکمل پڑھنے کے لیے  بہ نیت ِحصولِ علم ِدین روزانہ چند صفحات پڑھ کر علم ِدین حاصل کرنے کے ثواب کا حقدار بنوں   گا{11}دوسروں   کویہ کتابپڑھنے کی ترغیب دلاؤں   گا {12} اس حدیثِ پاک ’’ تَھَادَوْا تَحَابُّوْا ‘‘ ایک دوسرے کو تحفہ دو آپس میں   محبت بڑھے گی )موطأ امام مالک ، ج۲، ص۴۰۷، رقم :  ۱۷۳۱، دارالمعرفۃ بیروت( پرعمل کی نیت سے )ایک یا  حسبِ توفیق تعداد میں  ( یہ کتابیں   خرید کر دوسروں   کو تحفۃً دوں   گا{13}جو مسئلہ سمجھ میں   نہیں   آئے گا اس کے لیے آیت ِکریمہ فَسْــٴَـلُوْۤا اَهْلَ الذِّكْرِ اِنْ كُنْتُمْ لَا تَعْلَمُوْنَۙ(۴۳) ‘‘ ترجمۂ کنز الایمان :  ’’ تو اے لوگو علم والوں   سے پوچھو اگر تمہیں   علم نہیں  ۔‘‘ (پ۱۴، النحل : ۴۳) پر عمل کرتے ہوئے علماء سے رجوع کروں   گا {14}جس مسئلے میں   دشواری ہوگی اس کو باربار پڑھوں   گا {15}جو نہیں   جانتے انہیں   سکھاؤں   گا{16}کتابت وغیرہ میں   شَرْعی غلَطی ملی تو ناشرین کو تحریری طور پَر مُطَّلع کروں   گا۔(ناشِرین ومُصَنِّف وغیرہ کو کتا بوں   کی اَغلاط صِرْف زبانی بتانا خاص مفید نہیں   ہوتا۔)

   اچھی اچھی نیّتوں   سے متعلق رَہنمائی کیلئے ، اَمیرِ اہلسنّت دَامَت بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہکا  سنّتوں   بھرا بیان ’’نیّت کا پھل‘‘اورنیتوں   سے متعلق آپ کے مُرتّب کردہ  کارڈ  اور پمفلٹ  مکتبۃ المدینہ  کی کسی بھی شاخ سے ھدیّۃًحاصِل فرمائیں  ۔

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

کتب ِاعلٰی حضرت عَلَیْہِ رَحْمَہاورالمد ینۃ العلمیۃ

از :  بانیِ دعوتِ اسلامی، عاشقِ اعلیٰ حضرت، شیخِ طریقت، امیر اہلسنّت حضرت علّامہ مولانا ابو بلال محمد الیاس عطاؔر قادری رضوی ضیائی دَامَت بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ

            الحمد للّٰہ علٰی إِحْسَانِہٖ وَبِفَضْلِ رَسُوْلِہٖ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ میرے ولیٔ نِعمت، میرے آقا اعلیٰحضرت، اِمامِ اَہلسنّت، عظیم البَرَکت، عظیمُ المرتبت، پروانۂ شمعِ رِسالت،



Total Pages: 16

Go To