Book Name:Rafiq ul Mutamirin

                                                                                                                                                   

                                                                                                                                                                                                                             

                                                                                                                                                                                                                             

رفیق المعتمرین

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

مُؤَلِّف :

شیخِ طریقت، امیرِ اہلسنّت، بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علّامہ مولانا

ابوبلال محمد الیاس عطّاؔر قادِری رضوی دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ

 

 

 

 

 

 

 

 

ناشِر

مکتبۃُ المد ینہ بابُ المدینہ کراچی

 

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

 عُمرے والے  کیلئے 52نیّتیں 

(مع روایات، حکایات و مدنی پھول)

(حجّاج و مُعتَمِرین ان میں   سے موقع کی مُناسَبَت سے وہ نیتیں   کر لیں   جن پر عمل کرنے کا واقِعی ذِہن ہو)

     {1}صِرْف رِضائے الٰہی عَزَّ وَجَلَّ پانے کے لئے  عمرہ کروں   گا ۔ (قَبولیَّت کیلئے اِخلاص شَرْط ہے اور اِخلاص حاصل کرنے میں   یہ بات بہت معاوِن ہے کہ رِیا کاری اور شہرت کے تمام   اسباب تَرْک کر دیئے جائیں  ){2}حُضُورِاکرم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ کی پیروی میں   عمرہ کروں   گا{3}ماں   باپ کی رِضا مندی لے لوں   گا ۔ (بیوی شوہر کو رِضا مندکرے ، مقروض جو ابھی قرض ادانہیں   کر سکتا تو اُس( قرض خواہ)سے بھی اجازت لے ۔  (مُلَخَّص ازبہارِ شریعت ج ا ص ۱۰۵۱ )) {4} مالِ حلال سے عمرہ کروں   گا {5} چلتے وقت گھروالوں   ، رشتے داروں   اور دوستوں   سے قُصور مُعاف کرواؤں   گا، ان سے دعا کرواؤں   گا ۔ ( دوسروں   سے دعا کروانے سے بَرَکت حاصِل ہوتی ہے ، اپنے حق میں   دوسرے کی دُعا قَبول ہونے کی زیادہ امّید ہوتی ہے ۔ دعوتِ اسلامی کے اشاعتی ادارے مکتبۃُ المدینہ کی مطبوعہ 326صَفْحات پر مشتمل کتاب ’’فضائلِ دُعا‘‘صَفْحَہ 111پر منقول ہے ، حضرتِ موسیٰ عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلامکو خطاب  ہوا : اے موسیٰ! مجھ سے اُس منہ کے ساتھ دُعا مانگ جس سے تُو نے گناہ نہ کیا ۔  عرض کی :  الٰہی! وہ منہ کہاں   سے لاؤں  ؟ (یہاں  انبیاء  عَلَيْهِمُ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلامکی تواضُع ہے ورنہ وہ یقینا ہر گناہ سے  معصوم ہیں   ) فرمایا : اَوروں   سے دُعا کرا کہ اُن کے مُنہ سے تُو نے گناہ نہ کیا ۔    (مُلَخَّص اَز مثنوی مولانا روم دفتر سوم ص۳۱)) {6}حاجت سے زائد تَوشہ(اَخراجات) رکھ کر رُفَقاء پر خَرْچ اور فُقَراء پر تصدُّق(یعنی خیرات) کر کے ثواب کماؤں   گا {7} زَبان اور آنکھ وغیرہ کی حفاظت کروں   گا ۔ (نصیحتوں   کے مَدَنی پھولصَفْحَہ 29 اور 30پر ہے :  (۱)(حدیثِ پاک ہے  : اللہ  عَزَّوَجَلَّ فرماتا ہے )اے ابنِ آدم! تیرا دِین اُس وَقت تک دُرُست نہیں   ہوسکتاجب تک تیری زَبان سیدھی نہ ہواور تیری زَبان تب تک سیدھی نہیں   ہوسکتی جب تک تُواپنے ربّ عَزَّوَجَلَّ سے حَیا نہ کرے ۔  (۲)جس نے میری حرام کردہ چیزوں   سے اپنی آنکھوں   کوجُھکا لیا(یعنی انہیں   دیکھنے سے بچا)میں   اسے جہنَّم سے امان (یعنی پناہ) عطاکر دوں   گا ) {8} دَورانِ سفر ذِکر ودُرُود سے دل بہلاؤں   گا  ۔ ( اس سے فِرِشتہ ساتھ رہے گا ! گانے باجے اورلَغوِیات کا سلسلہ رکھا تو شیطان ساتھ رہے گا ) {9} اپنے لئے اور تمام مسلمانوں   کے لئے دُعا کرتا رہوں   گا ۔ ( مسافِر کی دعا قَبول ہوتی ہے ۔  نیز’’ فضائلِ دُعا ‘‘صَفْحَہ 220پر ہے :  مسلمان کہ مسلمان کے لیے اُس کی غَیْبَت (یعنی  غیرموجودَگی ) میں  (جو) دُعا مانگے (وہ قَبول ہوتی ہے ) حدیث شر یف میں   ہے : یہ (یعنی غیر موجودَگی والی )دُعا نہایت جلد قَبول ہوتی ہے ۔  فِرِشتے کہتے ہیں   : اُس کے حق میں   تیری دعا قَبول اور تجھے بھی اِسی طرح کی نِعمت حُصُول) ){10}



Total Pages: 42

Go To