Book Name:28 Kalimaat-e-Kufr

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ  رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ علٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

28 کلِماتِ کفر

شیطٰن لاکھ سُستی دلائے یہ رسا لہ (17صفحات)  اوّل تا آخر پڑھ کر ایمان کی حفاظت کا سامان کیجئے۔

دُرُود شریف کی فضیلت

     سرکارمدینہ، راحتِ قلب وسینہ، صاحبِ معطَّرپسینہ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ کا فرمانِ باقرینہ ہے:  اے لوگو!  بے شک بروزِ قیامت اسکی دہشتوں اورحساب کتاب سے جلدنجات پانے والا شخص وہ ہوگا جس نے تم میں سے مجھ پر دنیا کے اندر بکثرت درود شریف پڑھے ہوں گے۔  (اَلْفِرْدَوْس بمأثور الْخَطّاب ج۵ص۲۷۷ حدیث ۸۱۷۵)

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیْب!          صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

                  تنگدستی ، بیماری، پریشانی اور فَوتگی کے مواقع پر بعض لوگ صدمے یا اشتعال (یعنی جذباتیت)  کے سبب بسا اوقات نَعُوْذ بِاللّٰہ کفریہ کلمات بک دیتے ہیں۔  اللہ عَزَّ وَجَلَّ پر اعتراض کرنا، اُس کو ظالم یاضرورت مند یا محتاج یا عاجز سمجھنا یا کہنا یہ سب کُھلے کُفر ہیں ۔  یاد رکھئے !  بِلااِکراہِ شرعی ہوش و حواس میں صریح یعنی کُھلاکُفر بکنے والا اور معنیٰ سمجھنے کے باوجود ہاں میں ہاں ملانے والا بلکہ تائید میں سر ہلانے والا بھی کافر ہوجاتا ہے، اس کا نکاح ٹوٹ جاتا ، بیعت ختم ہوجاتی اور زندَگی بھر کےنیک اعمال برباد ہوجاتے ہیں ، اگر حج کرلیا تھا تو وہ بھی گیا، اب بعد تجدید ایمان  (یعنی نئے سرے سے مسلمان ہو نے کے بعد) صاحبِ اِستطاعت ہونے  (یعنی شرائط پائے جانے  )  پر نئے سِرے سے حج فرض ہوگا۔

مشکلات کے وَقت بکے جانے والے کفریات کی مثالیں

          {1} بطورِ اعتراض کہنا: وہ شخص لوگوں کے ساتھ کچھ بھی کرے اللہ کی طرف سے اُس کوفُل  (FULL )  آزادی ہے {2} بطورِ اعتراض یوں کہنا:  کبھی ہم فُلا ں کے ساتھ تھوڑا کچھ کرلیں ، اللہ ہمیں فوراً پکڑ لیتا ہے{3} اللہ نے ہمیشہ میرے دشمنوں کا ساتھ دیا ہے {4} ہمیشہ سب کچھ اللہ پر چھوڑ کر بھی دیکھ لیا کچھ نہیں ہوتا {5}  اللہ نے میری قسمت ابھی تک تو ذرا اچّھی نہیں بنائی {6} شاید اس کے خزانے میں میرے لیے کچھ بھی نہیں ، میری دُنیاوی خواہشات کبھی پوری نہیں ہوئیں ، زندَگی بھر میری کوئی دُعا قَبول نہیں ہوئی ، جس کو چاہا وہ دُور چلا گیا، ہر خواب میرا ٹوٹا، تمام ارمان کُچلے گئے، اب آپ ہی بتائیں میں اللہ پر کیسے ایمان لاؤں ؟ {7}  ایک شخص نے ہماری ناک میں دم کررکھا ہے، مزے کی بات یہ ہے کہ اللہ بھی ایسوں کے ساتھ ہوتا ہے {8}  جس شخص نے مصیبتیں پہنچنے پر کہا:  اے اللہ!  تُو نے مال لے لیا، فُلاں چیز لے لی، اب کیا کرے گا؟ یا اب کیا چاہتا ہے؟ یا اب کیا باقی رہ گیا ؟ یہ قول کفر ہے{9} جو کہے :  ’’ اللہ نے میری بیماری اور بیٹے کی



Total Pages: 5

Go To