Book Name:Rasail e Dawateislami

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

 فَیضانِ مُرْشِد [1]؎

{ شیطان لاکھ سُستی دِلائے یہ تحریری بیان مکمل پڑھ لیجئے ۔ اِن شآء اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ  آپ اپنے دل کو یادِ مُرشد میں مچلتا پائیں گے ۔ }

دُرُودِ پاک کی فضیلت

             شیخِ طریقت، امیرِاہلسنّت، بانیٔ دعوت ِاسلامی حضرتِ علّامہ مولانا ابوبلال محمد اِلیاس عطّارؔ قادری رضوی ضیائی دَامَت بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ  اپنے تخریج شدہ رسالے ’’ضیائے درودوسلام‘‘میں نقْل فرماتے ہیں کہ سرکارِ مدینہ ، سلطانِ باقرینہ ، قرارِ قلب و سینہ ، فیض گنجینہ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کافرمانِ برکت نشان ہے :  ’’مجھ پردُرود شریف پڑھ کر اپنی مجالِس کو آراستہ کرو کہ تمہارا دُرُودِپاک پڑھنا بروزِ قیامت تمہارے لیے نور ہو گاـ ۔ ‘‘(فردوسُ الاخبار، رقم الحدیث۳۱۴۸، ج۳، ص۴۱۷، طبعۃ دارالکتب العربی بیروت)

صَلُّوْ ا عَلَی الْحَبِیبْ            صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

غوثِ اعظم رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ  کا تَصَرُّف

            اعلٰی حضرت، اِمامِ اَہلسنّت، ولیٔ نِعمت، عظیمُ البَرَکت، عَظِیمُ المَرْتَبت، پروانۂ شمعِ رِسالت، مُجَدِّدِ دِین ومِلَّتحضرتِ علَّامہ مولانا الحاج الحافظ القاری الشّاہ امام احمد رَضا خان عَلَیْہِ رَحْمَۃُ الرَّحْمٰن اپنے عظیم ُ الشّان شہر ۂ آفاق فتاویٰ رضویہ جلد 21 صفحہ 388 پرنقل کرتے ہیں :  حضرت سَیِّدُنَا شیخ عارف بِاللہ ابُو الخیربِشْر بن محفوظ



[1]    یہ بیان نگرانِ شورٰی حاجی محمد عمران عطاری سَلَّمَہُ الْبَاری نے۲۹ جمادی الاولٰی۱۴۲۶؁ھ بمطابق 7جولائی 2005 ؁ء فیضانِ  مدینہ ، مرکز الاولیا لاہور کے ہفتہ وار اجتماع میں فرمایا ۔ضروری ترمیم واضافے کے ساتھ پیش کیا جا رہا ہے۔



Total Pages: 136

Go To