Book Name:Pani Kay Baray Main Aham Malomat

پہلے اِ سے پڑھ لیجئے !

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَالصَّلٰوۃُ وَالسَّلامُ  عَلٰی سَیِّدِالْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط بسْمِ اللّٰہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ ط

            اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّوَجَلّ تبلیغِ قرآن وسُنَّت کی عالمگیر غیر سیاسی تحریک دعوتِ اسلامی کے بانی، شیخِ طریقت ، امیرِاہلسنّت حضرت علامہ مولاناابوبلال  محمد ا لیا س عطَّا رقادری رضوی ضیائی دَامَت بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے اپنے مخصوص انداز میں   سنتوں   بھر ے بیانات ، علم و حکمت سے معمورمَدَ نی مذاکراتاور اپنے تربیت یافتہ مبلغین کے ذَرِیعے کچھ ہی عرصے میں   لاکھوں   مسلمانوں   کے دلوں   میں   مدنی انقلاب برپا کردیاہے ، آپ دَامَت بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ کی صحبت سے فائدہ اُٹھاتے ہوئے کثیر اسلامی بھائی وقتاً فوقتاً مختلف مقامات پر ہونے والے مَدَ نی مذاکراتمیں   مختلف قسم کے مثلاًعقائدو اعمال، فضائل و مناقب ، شریعت و طریقت، تاریخ وسیرت ، سائنس وطِبّ، اخلاقیات و اِسلامی معلومات اور دیگر بَہُت سے موضوعات کے متعلق سُوالات کرتے ہیں   اورشیخِ طریقت امیرا ہلسنّت دَامَت بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ انہیں   حکمت آموز و عشقِ رسول صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ میں   ڈوبے ہوئے جوابات سے نوازتے ہیں  ۔ امیرِاہلسنّت دَامَت بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ کے ان عطاکردہ دلچسپ اورعلم و حکمت سے لبریز اِرشادات کے مَدَنی پھولوں   کی خوشبوؤں   سے دنیابھرکے مسلمانوں   کومہکانے کے مقدّس جذبے کے تحت دعوتِ اسلامی کی مجلس مَدَ نی مذ ا کرہ ان مَدَنی مذاکرات کوتحریری گلدستوں   کی صورت میں   پیش کرنے کی سعادت حاصل کررہی ہے ۔ اس مَدَ نی مذاکرہکے تحریری گلدستہ کا مطالعہ کرنے سے اِن شَاءَ اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ عقائد و اعمال اور ظاہر و باطن کی اصلاح، محبت ِالٰہی عَزَّوَجَلَّو عشقِ رسول صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ کی لازوال دولت کے ساتھ ساتھ مزید حصولِ علمِ دین کا جذبہ بھی بیدارہوگا ۔ اِنْ شَاء اللّٰہ عَزَّوَجَل           

     {مجلس مدنی مذاکرہ}  ۶رجب المرجب ۱۴۲۹ھ  /  10 جولائی 2008ء

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَالصَّلٰوۃُ وَالسَّلامُ  عَلٰی سَیِّدِالْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط بسْمِ اللّٰہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ ط

پانی کے بارے میں   اَہمّ معلُومات

(مع دیگر دلچسپ سوال جواب)

شیطان لاکھ سُستی دِلائے یہ رِسالہ (48صفحات)مکمل پڑھ لیجئے

اِن شَاءَ اللّٰہ عَزَّوَجَلَّمعلومات کااَنمول خزانہ ہاتھ آئے گا ۔

دُرُود شریف کی فضیلت

          حضرتِ سیِّدُنا اُبی بِن کعب رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے مروی ہے کہ مَیں   نے بارگاہِ رسالت مآب صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ میں   عرض کی : یارَسُوْلَ اللہ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ ، مَیں  آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  پربکثرت دُرُودبھیجتاہوں   تو میں   آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ پردُرُود پاک بھیجنے کے لئے کتناوقت مُقَرَّر کر لوں   ؟ آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا :  جتنا تم چاہو، میں   نے عرض کی :  چوتھائی ۔  آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا :  جتناچاہو اگر تم اس سے زیادہ کرلوتو وہ تمہارے لئے بہترہے ۔ میں   نے عرض کی  : نِصف(یعنی ـآدھا) ۔  آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا :  جتناچاہواگر تم اس سے زیادہ کرلوتو وہ تمہارے لئے

 

 بہتر ہے ۔  میں   نے عرض کی :  دو تہائی ۔  آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا :  جتنا چاہو اگر تم اس سے زیادہ کرلوتو وہ تُمہارے لئے بہترہے ۔  میں   نے عرض کی :  یارَسُوْلَ اللہ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ ! میں   (دیگراَورادووَظائف میں   صَرف ہونے والا)اپنا تمام وَقت آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  پر دُرُودِ پاک بھیجنے کے لئے مُقَرَّر کرتاہوں   توآپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے فرمایا :  اِِذًا تُکْفَی ھَمَّکَ وَیُغْفَرُلَکَ ذَنْبُکَیعنی تب تو تمہاری فکروں   کودُور کرنے کے لئے کافی اورتمہارے گناہوں   کے لئے کفَّارہ ہو جائے گا ۔    (سُنَن تِرمِذِی ج۴ص۲۰۷حدیث ۲۴۶۵دارالفکربیروت)

دُکھوں   نے تم کو جو گھیرا ہے تو دُرُود پڑھو

جو حاضِری کی تَمنّا ہے تو دُرُود پڑھو

صَلُّوْا عَلَی الْحَبِیْب!                صَلَّی اللّٰہُ تعالٰی عَلٰی مُحَمَّد

کُھلی رکھی ہوئی بالٹی کے پانی سے وُضُو و غُسْل کرناکیسا؟

سُوال :           اگر کئی روز سے پانی کی بالٹی کُھلی رکھی ہوئی ہے تو کیااس سے وُضُواورغُسْل دُرُست ہے ؟

جواب :            جی ہاں  ! پانی پڑے پڑے ناپاک نہیں   ہوجاتا اورنہ مَحض شک سے کوئی چیز ناپاک ہوتی ہے ۔

          فُقَہائے کرام رَحِمَہُمُ اللہُ السَّلَام  فرماتے ہیں   : ’’چھوٹا گڑھا کہ جس میں   نَجاست گِرنے کا خوف ہومگر یقین نہ ہوتواِس کے بارے میں  (یہ) معلوم کرنا (کہ کہیں   یہ ناپاک تو نہیں   ؟)اِس پرلازم نہیں   لہٰذا اس سے وُضُو کرنا ترک نہیں   کیاجائے گا جب تک کہ اِس میں   نَجاست پڑجانے کا یقین نہ ہوجائے ۔ ‘‘            (اَلْفَتَاوی الھِنْدِیّۃ ج۱ص۲۵کوئٹہ)

مُسْتَعْمَل پانی کی تعریف

سُوال :           مُـسْـتَـعْـمَـل پانی کسے کہتے ہیں  ؟

 

 



Total Pages: 9

Go To