Book Name:Selfie Kay 30 Ibratnak Waqiyat

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ  رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ علٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

سیلفی کے 30 عبرت ناک واقعات

یہ رسالہ) 18صَفحات (  مکمّل پڑھ لیجئے،  اِنْ شَآءَاللہُ عَزَّ   وَجَلَّ  اس کودنیا و آخرت کے لئے مفید پائیں گے۔ 

دُرود شریف کی فضیلت

سرکارِمدینۂ منوّرہ، سردارِمکّۂ مکرّمہ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ   کا فرمانِ  بَرَکت نشان ہے:اے لوگو !   بے شک بروزِ قِیامت اس کی دَہشتوں اور حساب کتاب سے جلدنجات پانے والا شخص وہ ہوگاجس نے تم میں سے مجھ پر دنیا کے اندر بکثرت دُرُودشریف پڑھے ہوں گے۔   (اَلْفِردَوس بمأثور الْخِطابج۵ص۲۷۷ حدیث۸۱۷۵)

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیْب!                       صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

اس رسالے میں موجود سیلفی کے بارے میں واقعات وغیرہ زیادہ تر NETسے حاصل کئے گئے ہیں ۔    

 {۱} چورکیسے گرفتار ہوا؟

          فرانس کے شہر ’’روش فوغ‘‘  (Roche fort) میں موبائل فون چوری کرنے والا22سالہ نوجوان سیلفی  (Selfie) بنانے کے شوق کی وجہ سے گرفتار ہوگیا ۔   ایک اخباری اطِّلاع کے مطابق اس ملزم نے جولائی کے مہینے میں اسی شہر سے ایک شخص کا موبائل فون چوری کیا تھا۔   کافی دن گزر جانے کے بعد اس نے شہر میں گھومتے پھرتے اس فون سے اپنی ایک سیلفی بنائی لیکن اسے یہ علم نہیں تھا کہ اس اسمارٹ فون کے مالک نے فون کی سیٹنگز (Settings)  ایسی کر رکھی تھیں کہ اس کے ذریعے اُتاری گئی ہر تصویر خود بخود اُس شہری کے گھر کے کمپیوٹر پر منتقل ہو جاتی تھی۔  اس ملزم نے جیسے ہی اپنی سیلفی بنائی،  وہ فوراًفون کے مالک کے گھر پر اس کے کمپیوٹر تک پہنچ گئی!   اس نے وہ تصویربلاتاخیرپولیس تک پہنچا دی جس کے نتیجے میں پولیس سیلفی میں دکھائی دی جانے والی جگہ پر پہنچی اور اس چور کو گرفتار کر لیا۔   

جان بوجھ کر ہلاکت پر پیش ہونا حرام ہے

          میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو!    سیلفی (Selfie، یعنی اپنی تصویر خود لینے) کا شوق آج کل عروج پر ہے۔  اب سے چند سال پہلے تک سیلفی  (Selfie)   کالفظ ہی انگلش لغت میں موجود نہیں تھا!  2013ء میں اس لفظ کو نہ صرف ڈِکشنری میں شامل کیا گیا بلکہ اِسے اِس سال کا ’’ اہم ترین لفظ ‘‘بھی قرار دیاگیا!   سیلفی بنا کر سوشل میڈیا پر نشر کرکے پسند (Like)  اور ناپسند  (Dislike) کے تأثرات کا مطالَبہ بھی کیاجاتا ہے ۔  کم وقت میں زیادہ سے زیادہ شہرت پانے کے لئے مشہور شخصیات،  بلند وبالاعمارات،  آبشاروں ، بلکہ شیر اورمگر مچھ جیسے خونخوار جانوروں ،  شارک جیسی خطرناک مچھلیوں اور چلتی ٹرینوں کے سامنے سیلفی لینے کے شوق میں اپنی جانوں کو خطرے میں ڈالنے والے لوگ بھی کافی تعداد میں دنیا کے اندر پائے جاتے ہیں ۔   یادرہے!   بِلا مَصلَحتِ شرعی جان بوجھ کر اپنے آپ کو ہلاکت پر پیش کرنا گناہ و حرام اور جہنَّم میں لے جانے والا کام ہے۔   پارہ2سورۃ البقرۃ آیت 195 میں ارشاد فرماتا ہے:

وَ لَا تُلْقُوْا بِاَیْدِیْكُمْ اِلَى التَّهْلُكَةِ ﳝ-

ترجمۂ کنزالایمان: اور اپنے ہاتھوں ہلاکت میں نہ پڑو۔ 

سیلفی کے نقصانات

          سیلفی کے کیا فائدے ہیں یہ تو اس کے شائقین سے پوچھئے!  ہو سکتا ہے وہ یادگار، حیران کن اور دلچسپ منظر کے حوالے سے سیلفی کو مفید



Total Pages: 7

Go To