Book Name:Khof e Khuda عزوجل

اَلْحَمْدُلِلّٰہِ  رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہ  الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

 المد ینۃ العلمیۃ

از : بانیِ دعوتِ اسلامی، عاشقِ اعلیٰ حضرت شیخِ طریقت، امیرِ اہلسنّت حضرت علّامہ مولانا ابوبلال محمد الیاس عطاؔر قادری رضوی ضیائی دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ

        اَلْحَمْدُلِلّٰہِ  علٰی اِحْسَا نِہٖ وَ بِفَضْلِ رَسُوْلِہٖ صَلَّی اللہ   تَعَالٰی  عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  تبلیغِ قراٰن و سنّت کی عالمگیر غیر سیاسی تحریک ’’دعوتِ اسلامی‘نیکی کی دعوت، اِحیائے سنّت اور اشاعتِ علمِ شریعت کو دنیا بھر میں عام کرنے کا عزمِ مُصمّم رکھتی ہے، اِن تمام اُمور کو بحسن و خوبی سر انجام دینے کے لئے متعدِّد مجالس کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جن میں سے ایک مجلس ’’المد ینۃ العلمیۃ‘‘بھی ہے جو  دعوتِ اسلامی کے عُلماء و مُفتیانِ کرام کَثَّرَ ھُمُ اللّٰہُ تعالٰی پر مشتمل ہے ، جس نے خالص علمی، تحقیقی او راشاعتی کام کا بیڑا اٹھایا ہے۔ اس کے مندرجہ ذیل پانچ شعبے ہیں :

        (۱)شعبۂ کتُبِ اعلیٰحضرت رَحْمَۃُ اللہ   تَعَالٰی  عَلَیْہِ

        (۲)شعبۂ درسی کُتُب  

        (۳)شعبۂ اصلاحی کُتُب

        (۴)شعبۂ تراجمِ کتب

        (۵)شعبۂ تفتیشِ کُتُب     

        ’’ا لمد ینۃ العلمیۃ‘‘کی اوّلین ترجیح سرکارِ اعلٰیحضرت اِمامِ اَہلسنّت، عظیم البَرَکت، عظیمُ المرتبت، پروانۂ شمعِ رِسالت، مُجَدِّدِ دین و مِلَّت، حامیٔ سنّت ، ماحیٔ بِدعت، عالِمِ شَرِیْعَت، پیرِ طریقت، باعثِ خَیْر و بَرَکت، حضرتِ علاّمہ مولیٰنا الحاج الحافِظ القاری الشّاہ امام اَحمد رَضا خان عَلَیْہِ رَحْمَۃُ الرَّحْمٰن کی گِراں مایہ تصانیف کو عصرِ حاضر کے تقاضوں کے مطابق حتَّی الْوَسع سَہْل اُسلُوب میں پیش کرنا ہے ۔تمام اسلامی بھائی اور اسلامی بہنیں اِس عِلمی ، تحقیقی اور اشاعتی مدنی کام میں ہر ممکن تعاون فرمائیں اورمجلس کی طرف سے شائع ہونے والی کُتُب کا خود بھی مطالَعہ فرمائیں اور دوسروں کو بھی اِ س کی ترغیب دلائیں ۔

        اللہ  عَزَّ وَجَلَّ ’’دعوتِ اسلامی‘‘ کی تمام مجالس بَشُمُول’’المد ینۃ العلمیۃ‘‘ کو دن گیارہویں اور رات بارہویں ترقّی عطا فرمائے اور ہمارے ہر عملِ خیر کو زیورِ اخلاص سے آراستہ فرماکر دونو ں جہاں کی بھلائی کا سبب بنائے۔ہمیں زیرِ گنبدِ خضرا  شہادت، جنّت البقیع میں مدفن اور جنّت الفردوس میں جگہ نصیب فرمائے ۔

                              اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صَلَّی اللہ   تَعَالٰی  عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم

                                                                                                                             

                                                                                                                                           رمضان المبارک ۱۴۲۵ھ  

پیشِ لفظ

بلاشبہ خوف ِ خدا  عَزَّوَجَلَّ  ہماری اُخروی نجات کے لئے بڑی اہمیت کا حامل ہے  کیونکہ عبادات کی بجاآوری اور منہیات سے باز رہنے کا عظیم ذریعہ خوف ِ خدا  عَزَّوَجَلَّ ہے۔ خوفِ خدا  عَزَّوَجَلَّ  کی اہمیت کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ نبی اکرم ، نورِ مجسم (صَلَّی اللہ   تَعَالٰی  عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ)نے ارشاد فرمایا ، ’’راس الحکمۃ مخافۃ اللہ  یعنی حکمت کا سرچشمہ اللہ   عَزَّوَجَلَّ  کا خوف ہے ۔(کنزالعمال : رقم ۵۸۷۳)

        زیر ِ نظر کتاب ’’دعوت ِ اسلامی ‘‘کی مجلس المدینۃ العلمیۃ کے شعبۂ اصلاحی کتب کی پیش کش ہے، جس میں خوفِ خدا  عَزَّوَجَلَّ  کے متعلق کثیر آیاتِ کریمہ ، احادیث ِ مبارکہ اور بزرگانِ دین کے اقوال واحوال کے بکھرے ہوئے موتیوں کو سلک ِ تحریر میں پرونے کی کوشش کی گئی ہے ۔

        اللہ   عَزَّوَجَلَّ  کی بارگاہ میں دعا ہے کہ وہ عوام وخواص کو اس کتاب سے مستفید ہونے کی توفیق عطا فرمائے اور اسے مؤلف ودیگر اراکین مجلس المدینۃ العلمیۃ کی اُخروی نجات کا ذریعہ بنائے



Total Pages: 42

Go To