Book Name:40 Madani Inamaat

مَدَنی وَضاحتیں

مَدَ نی اِنعاما ت کی وضاحتوں اور رعا یتوں سے مُتَعَلِّق سُوالا ت کے جوابا ت کے لیے تنظیمی طور پرچار قاعدے مقرّر کئے گئے ہیں ۔

قاعدہ نمبر1: جو یومیہ مَدَنی اِنعامات چند ’’   جُزئیات‘‘ پر مشتمل ہیں ۔

مثلاً : تہجد، اِشراق ، چاشت، اَوَّابین والا مَدَنی اِنعام، اِس مَدَ نی اِنعام میں 4 جُز ہیں ، لہٰذا ایسے مَدَنی اِنعامات پر اکثر پر عَمَل ہونے کی صورت میں تنظیمی طور پر عَمَل مان لیا جا ئے گا ۔

(اکثر سے مُراد آدھے سے زیادہ مَثَلاً 100میں سے51 اکثر کہلائے گا)([1])

قاعِدہ نمبر2 :بعض مَدَنی اِنعامات ایسے ہیں جن پر کسی دن عمل نہ ہونے کی صورت میں تنظیمی طور پر دوسرے دن عمل کی ترغیب ہے۔

 مَثَلاً:چار صَفحات فیضانِ سُنَّت،313بار دُرُودِ پاک پڑھنے یا کنزُ الایمان شریف سے کم از کم 3آیات کی تِلاوت ( مَع ترجمہ و تفسیر) کرنے سے


 

 



...[1] حاشیہ :یہ قاعدہ مدنی انعام نمبر24پر لاگو نہیں ہوتا ، اسی طرح مدنی انعام نمبر2کے چار اجزاء: ’’(۱)پانچوں نمازیں (۲)باعمامہ(۳)تکبیر اُولیٰ کے ساتھ(۴)باجماعت ‘‘میں سے پہلے اور چوتھے جز پر بھی لاگونہیں ہوتا۔)

 



Total Pages: 21

Go To