Book Name:Fatawa Razawiyya jild 29

 

 

 

رسالہ

ثلج الصدر لایمان القدر۱۳۲۵ھ

(سینے کی ٹھنڈک،ایمان تقدیر کے سبب)

 

بسم اﷲ الرحمن الرحیم ط

مسئلہ ۱۲۱:از ضلع کھیری ملك اودھ موضع کٹوارہ مرسلہ سید محمد مظفر حسین صاحب خلف سید رضا حسین صاحب،تعلقدار کٹوارہ ۲۸،محرم الحرام ۱۳۲۵ھ

چہ می فرمایند علمائے دین دریں مسئلہ(کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ کے بارے میں،ت)قرآن میں جس آیت کے معنی یہ ہیں کہ "اے محمد !ان اشخاص کو زیادہ ہدایت مت کرو،ان کےلئے اسلام کے واسطے مشیت ازلی نہیں ہے،یہ مسلمان نہ ہوں گے "۔اور ہر امر کے ثبوت میں اکثر آیات قرآنی موجود ہیں،تو پس کیونکر خلاف مشیت پروردگار کوئی امر ظہور پذیر ہوسکتا ہے،کیونکہ مشیت کے معنی ارادہ پروردگار عالم کے ہیں،تو جب کسی کام کا ارادہ اﷲ تعالٰی نے کیا تو بندہ اس کے خلاف کیونکر کرسکتا تھا۔اور اﷲ نے جب قبل پیدائش کسی بشر کے ارادہ اس کے کافر رکھنے کا کرلیا تھا توا ب وہ مسلمان کیونکر ہوسکتا ہے " یَہۡدِیۡ مَنۡ یَّشَآءُ"[1]۔


 

 



[1] القرآن الکریم ۲/ ۲۷۲



Total Pages: 750

Go To