اہم نوٹ



جنّت کیا ہے؟:جنّت ایک ایسی شاندار و بے مثال جگہ ہے جو اللہ عَزّ َ وَجَلَّ نے ایمان والوں کے لئے بنائی ہےاور اِس میں ایسی نعمتیں رکھی ہیں جو نہ کسی آنکھ نے دیکھیں نہ کسی کان نے سُنیں اور نہ ہی کسی دل میں اُن کا خیال آیا۔ جنّت کے بارے میں جو کچھ بیان کیا جاتا ہے وہ صِرْف سمجھانے کےلئے ہوتا ہے، ورنہ دنیا کی اعلیٰ ترین چیز کا بھی جنّت کی کسی نعمت سے کوئی مقابلہ نہیں۔(بہار شریعت،ج1،ص152مفہوماً)


علمائےکرام اور دیگر شخصیات کے تأثرات(اقتباسات)

(1)حضرت علامہ بدر الزمان قادِری (پرنسپل جامعہ ہجویریہ، داتا دربار، مرکز الاولیا، لاہور):دعوتِ اسلامی کے”ماہنامہ فیضانِ مدینہ“نے چاردانگِ عالم میں اپنی دھوم مچا رکھی ہے، میں بڑی باقاعدگی کے ساتھ خود بھی اس کا مطالعہ کرتا ہوں اور دیگر لوگوں اور گھر کی خواتین کو بھی اس کے مطالعے کی تلقین کرتا ہوں۔

 


ہمارے معاشرے میں تلاشِ رشتہ کے وقت عموماً ظاہری اور مادِّی چیزوں کو زیادہ اہمیت دی جاتی ہے جبکہ دین داری، شرافت اور اچھے اَخلاق جیسی خوبیوں کو نظر انداز کردیا جاتا ہے جو اِزدِواجی زندگی میں اہم کردار ادا کرتی ہیں۔ غالباً اسی لئے معاشرے میں طلاق دینے کا رجحان دن بَدِن بڑھتا جارہا ہے۔

یاد رکھئے! جب تک انسان کا باطِن خوبصورت نہ ہو ظاہری خوبصورتی کسی کام کی نہیں۔


غصّے پر قابو پانے کے طریقے

غُصّہ اىک چھوٹا سا لفظ ہے مگر اپنے نتائج کے اعتبار سے مُتَعَدَّد خرابىوں کا سبب ہے۔ اس کا ضبط(یعنی قابوکرنا) نىک لوگوں کى صِفت ہے، چنانچہ متقىن کى صفات کے بىان مىں فرمانِ رب العزت ہے: (وَ  الْكٰظِمِیْنَ  الْغَیْظَ  وَ  الْعَافِیْنَ  عَنِ  النَّاسِؕ-) ترجمۂ کنز الاىمان: اور غصہ پىنے والے اور لوگوں سے در گزر کرنے والے۔(1)

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

1... پ 4، اٰل عمرٰن: 134


عِمارتِ نبوّت کی آخری اینٹ

ارشادِ باری تعالٰی ہے: (مَا كَانَ مُحَمَّدٌ اَبَاۤ اَحَدٍ مِّنْ رِّجَالِكُمْ وَ لٰكِنْ رَّسُوْلَ اللّٰهِ وَ خَاتَمَ النَّبِیّٖنَؕ- ) ترجمہ: محمد تمہارے مَردوں میں کسی کے باپ نہیں ہیں لیکن اللہ کے رسول ہیں اور سب نبیوں کے آخر میں تشریف لانے والے ہیں۔(پ22،الاحزاب:40)

تفسیر: یہ آیتِ مبارکہ حضور پُر نور صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم  کے آخری نبی (Last prophet) ہونے پر نَصِّ قطعی ہے اور اس کا معنیٰ پوری طرح واضح ہے جس میں کسی تاویل اور تخصیص کی ذرّہ بھر بھی گُنجائش نہیں۔

محرم الحرام میں نئی چیز خریدنا یا پہننا  کیسا؟ /”بھاڑ میں جا !“کہنا کیسا؟ وغیرہ

محرمُ الحرام میں نئی چیز خریدنا یا پہننا کیسا؟

سوال:کیا محرمُ الحرام میں اپنے لئے کوئی نئی چیز خرید یا پہن سکتے ہیں؟

جواب:جی ہاں! محرمُ الحرام میں اپنے لئے نئی چیز خرید بھی سکتے ہیں اور پہن بھی سکتے ہیں یہاں تک کہ عاشورا (یعنی دس10 محرم الحرام) کے دن بھی اگر کوئی نئی چیز خرید کر استعمال میں لائے تو یہ بھی بِلا کراہت جائز ہے، اس میں کوئی گناہ نہیں ہے۔

گنج شکر(حضرت سیدنا با با  فرید  رحمۃ اللہ تعالٰی علیہ )

بَرِّعظیم پاک و ہند میں جن مُبارَک ہستیوں نے نیکی کی دعوت عام کی ان میں سے ایک آسمانِ ولایت کے آفتاب سلسلۂ عالیہ چشتیہ کے عظیم پیشوا حضرت بابا فریدُ الدّین مسعود گنج شکر فاروقی حنفی چشتی رحمۃ اللہ تعالٰی علیہ  کی ذاتِ گرامی بھی ہے، آپ رحمۃ اللہ تعالٰی علیہ کی ولادت569ھ یا 571ھ مطابق 1175ء میں مدینۃُالاولیا ملتان کے قصبہ”کَھتوال“میں ہوئی۔

قصور اپنا بھی ہے (بے روزگاری:آخری قسط)

صرف نوکری ہی ذریعۂ روزگارنہیں: بڑھتی ہوئی بے روزگاری (Unemployment) کا ایک سبب یہ ہے کہ نوجوانوں کی بہت بڑی تعداد نے سرکاری یا پرائیویٹ نوکری کو ہی بہترین ذریعۂ معاش سمجھا ہوا ہے ، وہ اس کے علاوہ کسی دوسرے راستے کے بارے میں سوچتے ہی نہیں ایسے نوجوان یہ فرضی حکایت پڑھیں اور اپنی سوچ پر نظر ثانی کریں۔

ماہنامہ محرم الحرام کی ویڈیوز لائبریری



ماہنامہ محرم الحرام کی بُک لائبریری