اہم نوٹ



عبادت کا سب سے افضل دن

سوال:وہ کونسا دن ہے جس میں عبادت کا ثواب سب سے زیادہ ملتا ہے ؟

جواب:مفسرِ شہیر،حکیمُ الامّت،حضرت مفتی احمد یار خان علیہ رحمۃ الرحمٰن تحریر فرماتے ہیں:جمعہ کا دن تمام دنوں سے افضل ہے کہ اس میں ایک نیکی کا ثواب ستر گنا ہے اور دُرود دوسری عبادتوں (یعنی نفل عبادتوں) سے افضل (ہے)۔ لہٰذا افضل دن میں افضل عبادت کرو (یعنی جمعہ کے روز خوب دُرود و سلام پڑھو)۔(مراٰۃ المناجیح،ج2،ص323)


کسی مسلمان کی جائز طریقے سے دل جوئی کرنا باعثِ اجرو ثواب اورجنت میں لے جانے والا کام ہے۔احادیثِ مبارکہ میں اس کے بہت فضائل بیان کئے گئے ہیں،چنانچہ نبیِّ اكرم صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم نےفرمایا:اللہ عَزَّوَجَلَّکےنزدیک  فرائض کی ادائیگی کے بعدسب سے افضل عمل مسلمان کے دل میں خوشی داخل کرنا ہے۔(معجم کبیر،ج11،ص59،حدیث:11079)


اُستاذالعُلماءوالمحدّثین،رئیس الفُقہاء، حضرت علّامہ وصی احمد مُحَدِّث سُورتی قادری علیہ رحمۃ اللہ البارِی بَر صغیر کے ان عُلما میں سے ایک تھے جِنہوں نے جَہالت کی تَاریکیوں میں عِلم کے بے شُمار چراغ روشن کئے۔آپ کی وِلادت 1251 بمطابق 1836ء میں صوبہ گجرات(ہند)کے شہر ”سُورت“ میں ہوئی۔ (منیۃالمُصلّی، تعریف بالمُحشّی العلّام، ص 8) تحصیلِ علمبُنیادی تعلیم اپنے والدمحترم مولانا محمد طَیّب سُورتی علیہ رحمۃ اللہ القَوی سے حاصل کی۔


اللہ پاک کا احسانِ عظیم ہے کہ اس نے ہمیں پھلوں جیسی نعمتیں عطا فرمائیں۔مالٹا،کینو،سنگترہ، چکوترا(Grapefruitمَوسَمبی اور مِٹّھا موسمِ سرما کے دلکش اور ذائقہ دارپھل ہیں۔ ان پھلوں کو’’ تُرشاوہ پھل‘‘ کہا جاتاہے۔ ’’ تُرشاوہ پھل‘‘ بیش بہا فوائد  کا مجموعہ ہیں۔ مالٹا اور کینو ذائقے اور فوائد میں قریب قریب ایک جیسے ہوتے ہیں لہٰذا ان کے چند مشترکہ فوائد پیش کئے جاتے ہیں:


رسول اللہ  صلَّی اللہ تعالٰی       علیہ  واٰلہٖ  وسلَّم نے ارشاد فرمایا: ”لَا عَدْوٰی وَلَا صَفَرَ وَلَا ھَامَۃیعنی نہ  بیماری  کا اُڑ کر لگنا ہے، نہ صَفَر  کی نحوست ہے نہ اُلّو کی نحوست ہے۔ ایک اعرابی نے عرض کی: یارسولَ اللہ! پھرکیا وجہ ہے کہ میرے اونٹ مٹی میں ہرن کی طرح (چست،تندرست و توانا)ہوتے ہیں،تو ایک  خارش زدہ اونٹ  ان میں داخل ہوتا ہے  اور ان کو بھی خارش  زدہ کر دیتا ہے ؟تو حضور علیہ الصّلوٰۃو السَّلام نے فرمایا: پہلے کو کس سے خارش لگی ؟(بخاری،ج4،ص26،حدیث:5717)


میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو! شیخِ طریقت، امیرِ اَہلِ سنّت، بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علّامہ مولانا ابو بلال محمد الیاس عطّاؔر قادری رضوی دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے نَفْسا نفسی کے اس دَور میں عاشقانِ رسول کی مَدَنی تحریک دعوتِ اسلامی کو مَدَنی مقصد ہی یہ عطا فرمایا کہ’’ مجھے اپنی اور ساری دنیا کے لوگوں کی اصلاح کی کوشش کرنی ہے‘‘ اِنْ شَآءَ اللہ عَزَّ  وَجَلَّ۔ اپنی اصلاح کےلئے مَدَنی اِنعامات پر عمل اور دوسروں کی اِصلاح کیلئے مَدَنی قافلوں میں سفر کرنا ہے۔


تاجر اسلامی بھائیو! کاروباری ترقی کے لئے جائز تدابیر اختیار کرنے میں حرج نہیں لیکن شریعتِ اسلامیہ ایسے طریقوں سے روکتی ہے جن سے مُعاشرتی بگاڑ پیدا ہو، معاشی ترقی کا پہیہ رُک جائے، حِرْص و ہَوَس کو فروغ ملے اور لوگوں کی مشکلات میں اضافہ ہو، لیکن بُرا ہو نفس وشیطان کا کہ یہ انسان کو ”لالچ“ کے جال میں پھنسا کر ناجائز و حرام ذرائع سے مال جمع کرنے پر اُبھارتے ہیں،


ہمارے بُزرگانِ دین جہاں بیان کی صورت میں لوگوں کے دلوں میں علم ِدین کے نُور کی شمعیں روشن کرتے رہے ہیں وہیں تَحریر کے مَیدان میں بھی  اصلاح کے مدنی پھول لُٹاتے رہے ہیں۔ان ہستیوں میں سے ایک عظیم عِلمی و رُوحانی شخصیّت حضرت سیّدنا بَہاء الدین ابُوالفتح محمدبن اَحمد شافعی (سالِ وفات852ہجری) بھی ہیں


ماہنامہ جمادی الاولٰی کی ویڈیوز لائبریری



ماہنامہ جمادی الاولٰی کی بُک لائبریری