Book Name:Yadgari Ummat Pay Lakhoon Salam

اللہ پاک آپ کو جزائےخیر عطا فرمائے۔  اٰمِین بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم

صَلُّوْا عَلَی الْحَبِیْب!                                             صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

مجلس اَئمّۂ  مساجد

  میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو!دعوتِ اسلامی کے کم  وبیش 104شُعبہ جات میں سےایک’’اَئمّۂ مساجد‘‘بھی ہے،جومَساجدکی آبادکاری کیلئے ائمہ ومُؤذِّنین کی تَقرُّرِی کا کام سَراَنْجام دیتی ہےاوران کی خَیْرخَواہی کرتے ہوئےمناسب مُشاہرےبھی مُقَرَّرکرتی ہے،تاکہ یہ اسلامی بھائی مُعاشی پریشانیوں سےآزاد (Free)ہوکر خُوب خُوب نیکی کی دعوت عام کرتے رہیں۔ مَساجد کو آباد کرنے میں اَئمہ ومُؤذِّنین کااَہَمّ کردارہوتا ہے۔دعوتِ اسلامی کےمدنی ماحول سے وابستہ اَئمّۂ کرام، صدائے مدینہ، اِنْفِرادی کوشش کےذَریعے نمازِ باجماعت کی طرف رَغْبت،دَرسِ فیضانِ سُنَّت،نمازِ فجر کے بعد مدنی  حلقے میں شِرکت اورسُنَّتوں  کی تربیت کیلئے عاشقانِ رسول کے مدنی قافلوں کی بَرکت سےمَسجدوں کوآباد رکھنےکی کوشش کرتے ہیں۔فرمانِ مُصْطَفٰے صَلَّی اللّٰہُ عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَہے:جو مسجدسےاُلفت رکھتا ہے، اللہ پاک اُس سےمَحَبَّت کرتاہے۔(مُعْجَمُ اَوْسَط،۴/ ۴۰۰، حدیث: ۶۳۸۳)

          حضرت علّامہ عبدالرّؤف مُنَاوِیرَحْمَۃُ اللّٰہ عَلَیْہلکھتےہیں:مسجدسےاُلْفت،رِضائے الٰہی کے لئے اس میں اعتکاف،نماز،ذِکْرُاللہ اورشَرعی مَسائل سیکھنےسکھانےکےلئےبیٹھےرہنےکی عادت بنانا ہے اور اللہ پاک  کااس بندے سےمَحَبَّت کرنا اس طرح ہے کہ اللہ  پاک  اس کو اپنے سایَۂ  رَحْمت میں جگہ عطا فرماتا اور اس کو اپنی حِفاظت میں داخل فرماتا ہے۔(فیض القدیر، ۶/۱۱۲)

                             ہم بھی مسجدآباد کر کے اپنے دل کوسُکون بخشنے،پانچوں وَقْت مسجد میں حاضِر ہو کر اپنے رَبّ کویادکرنے، عشقِ رسُول سے اپنے دل کی اُجڑی بستی آبادکرنے کیلئےدعوتِ اسلامی کامدنی ماحول