احمد رضا کا تازہ گلستاں ہے آج بھی

Image
حماد اپنے بڑے بھائی عِمادکے ساتھ بیٹھ کر مدنی چینل دیکھ رہا تھا، جس پر  اعلیٰ حضرت اور شاعری کے بارے میں سلسلہ چل رہا تھا۔
Image
(12) ہر مسلمان پر فرضِ اعظم ہے کہ اللہ (عَزَّوَجَلَّ) کے سب دوستوں سے محبت رکھے اور اس کے سب دشمنوں سے عداوت رکھے۔یہ ہمارا عین ایمان ہے۔(ملفوظاتِ اعلیٰ حضرت، ص 276)
Image
عقلمند اور سعادت مند اگر استاذ سے بڑھ بھی جائیں تو اسے استاذ کا فیض سمجھتے ہیں اور پہلے سے بھی زیادہ استاذ کے پاؤں کی مٹی سر پر ملتے ہیں۔(فتاوٰی رضویہ،ج24،ص424)
Image
(1)کسی کو سیّد سمجھنے اور اس کی تعظیم کرنے کے لئے ہمیں اپنے ذاتی علم سے اُسے سیّد جاننا ضروری نہیں، جو لوگ سیّد کہلائے جاتے ہیں ہم اُن کی تعظیم کریں گے۔(فتاویٰ رضویہ،ج 29،ص587)
Image
 (1)جب تک نبیِّ کریم (صلَّی اللہُ تعالٰی علیہِ واٰلہٖ وسَلَّم)  کی سچی  تعظیم  نہ ہو،  عمر بھر عبادتِ الٰہی میں گزرے،  سب بے کار و مردود ہے۔(تمہید الایمان،ص53مکتبۃ المدینہ)
Image
(9)کھانا کھاتے وقت نہ بولنے کا اِلْتِزام(لازم)کرلینا مَجُوس (یعنی آتش پرستوں)کی عادت ہے اور مکروہ ہے۔اورلغو باتیں کرنا یہ ہر وقت مکروہ،اور ذکرِ خیر کرنا یہ جائز ہے۔(ملفوظات اعلیٰ حضرت،ص448 ملخصاً)
Image
اعلیٰ حضرت امام احمد رضا خان عَلَیْہِ رَحْمَۃُ الرَّحْمٰن فرماتے ہیں: (4)مَحبوبانِ  خُدا کی یادگاری کے لئے دن مُقَرَّر کرنا بیشک جائز ہے۔(فتاویٰ رضویہ،ج29، ص202)
Image
(1) ہر مسلمان پر لازم ہے کہ اپنے آپ کو حضورِ اقدس صَلَّی اﷲُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَسَلَّم کا مَمْلُوک (یعنی غلام) جانے، تمام عالَم (یعنی ساری دنیا) ہی اُن کے رب عَزَّوَجَلَّ کی عطا سے ان کی مِلک ہے۔(فتاویٰ رضویہ،ج24، ص666)