Book Name:Main Hayadar kesay bani?

ایک روز بھائی نے فون کر کے بتایا کہ اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّوَجَلَّ مجھ پر لگایا جانے والا الزام بے بنیاد ثابت ہوا اور کورٹ نے مجھے باعزت بری کر دیا۔

اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ کی امیرِاہلسنّت پَررَحمت ہواوران کے صد قے ہماری مغفِرت ہو۔

صَلُّوْاعَلَی الْحَبِیب!                                            صلَّی اللّٰہُ تعالٰی عَلٰی محمَّد

{9}گمشدہ کاغذات مل گئے

          باب المدینہ  (کراچی)  کے علاقے گارڈن ایسٹ کی رہائشی اسلامی بہن کے بیان کا خلاصہ ہے کہ میرے گھر کے انتہائی اہم کاغذات گم ہوگئے اور تلاشِ بسیار کے باوجود بھی نہ ملے۔ جس کی وجہ سے میں کافی پریشان تھی۔ میں نے جب اپنی والدہ اور ہمشیرہ کو اپنی پریشانی سے آگاہ کیا تو انھوں نے انفرادی کوشش کرتے ہوئے مجھے دعوتِ اسلامی کے اسلامی بہنوں کے ہفتہ وار سنّتوں بھرے 12 اجتماعات میں شرکت کرنے اور ان اجتماعات میں دعا کرنے کا ذہن دیا۔ چنانچہ میں نے نہ صرف ہفتہ وار سنّتوں بھرے 12 اجتماعات میں شرکت کی نیت کرلی بلکہ ان میں جانا شروع کر دیا۔ اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّوَجَلَّ ابھی چند ہفتے ہی گزرے تھے کہ دعوتِ اسلامی کے اجتماعات میں شرکت کی برکت ظاہر ہوئی اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ کے فضل و کرم سے ہمارے گھر کے گمشدہ کاغذات مل گئے۔ اس طرح ہماری پریشانی دور ہو گئی۔

اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ کی امیرِاہلسنّت پَررَحمت ہواوران کے صد قے ہماری مغفِرت ہو۔

صَلُّوْاعَلَی الْحَبِیب!                                            صلَّی اللّٰہُ تعالٰی عَلٰی محمَّد

{ 10}میری اِصلاح ہوگئی

باب المدینہ  (کراچی)  کے علاقے رنچھوڑ لائن  ( بغدادی)  کی ایک اسلامی بہن کا کچھ اس طرح بیان ہے کہ میں گناہوں کے دلدل میں بری طرح دھنسی ہوئی تھی۔ نت نئے فیشن کی دلدادہ تھی۔ علمِ دین سے دوری کی وجہ سے دنیا کی چکا چوند زندگی کو ہی اوّلین مقصد سمجھتی تھی جس کے باعث دنیا کی محبت دل میں گھر کر چکی تھی۔ میری اِصلاح کی صورت کچھ یوں ہوئی کہ دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول سے منسلک ایک اسلامی بہن کی انفرادی کوشش سے دعوتِ اسلامی کے سنتوں بھرے اجتماع میں شرکت کی سعادت نصیب ہوئی اور دل کی کایا ہی پلٹ گئی۔ کل تک دنیا کو ہی سب کچھ سمجھتی تھی اس کی رنگینیوں کی طرف میلان تھا لیکن دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول کی برکتوں سے یاوہ گوئی،  فیشن پرستی جیسے بُرے افعال سے چھٹکارا نصیب ہوگیا۔ نیت کی ہے کہ اِنْ شَآء اللّٰہعَزَّوَجَلَّ آخری دم تک دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول سے وابستہ رہوں گی۔

اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ کی امیرِاہلسنّت پَررَحمت ہواوران کے صد قے ہماری مغفِرت ہو۔

صَلُّوْاعَلَی الْحَبِیب!                                            صلَّی اللّٰہُ تعالٰی عَلٰی محمَّد

{ 11}مدنی ماحول میّسر آگیا

          ٹنڈو جام  (سندھ)  کی ایک اسلامی بہن کا بیان ہے کہ میں بہت ماڈرن تھی۔ آوا زتو اچھی تھی ہی میں نے اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ کی اس نعمت کا غلط استعمال کرتے ہوئے اسٹیج پر گانا شروع کر دیا۔ مجھے گانے میں مَعَاذَاللّٰہ عَزَّوَجَلَّ اس قدر مہارت تھی کہ ایک مقابلے میں غزل گا کر پورے صوبے میں پہلی پوزیشن بھی حاصل کرچکی تھی۔ اب تو ٹی وی اور ریڈیو پر گانے کے لیے پیشکش ہونے لگی۔ اگر مجھ پر اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ کا فضل و کرم نہ ہوتا تو میں انہی گناہوں میں موت کے گھاٹ اتر جاتی لیکن خدا بھلا کرے دعوتِ اسلامی کا کہ جس کی بدولت مجھے سنّتوں بھرا ماحول مل گیا اور میں نے گناہوں سے توبہ کر لی۔ ہوا یوں کہ 1999؁ء میں ہماری پڑوسن جو کہ ٹنڈو جام سے حیدر آباد شفٹ ہو چکی تھیں ان کے گھر اجتماع ذکر ونعت کی ترکیب تھی انہوں نے مجھے بھی دعوت دی۔ خوش قسمتی سے میں بھی شریک ہو گئی ہماری پڑوسن نے نعت شریف پڑھنے کا کہا پہلے تو میں نے انکار کیا مگر ان کے اصرار پر نعت شریف پڑھ ہی دی ۔ مجھے بڑا سکون محسوس ہوا۔ اجتماع کے اختتام پر مبلغہ اسلامی بہن نے انفرادی کوشش کرتے ہوئے مجھے حیدر آباد میں ہونے والے دعوتِ اسلامی کے سنتوں بھرے اجتماع میں شرکت کی دعوت دی۔ میں نے ہاں کر دی اور اجتماع میں حاضر ہو گئی۔ اجتماع میں ہونے والے بیان اور ذکر و دعا نے میرے دل سے گناہوں کی لذت نکال دیا۔ دورانِ دعا اجتماع میں شریک اسلامی بہنوں پر نور کی بارش ہوتے دیکھ کر میں نے بھی بارگاہِ خدا وندی میں عرض کی مولا مجھے بھی ان جیسابنا دے۔ اجتماع کے آخر میں اسلامی بہنوں نے انفرادی کوشش کرتے ہوئے آئندہ اجتماع میں شرکت کی دعوت پیش کی۔اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّوَجَلَّ  میں سنتوں بھرے اجتماع میں شریک ہوتی رہی۔ ایک مرتبہ اسی اسلامی بہن نے انفرادی کوشش کرتے ہوئے کہا کہ آپ اپنے شہر میں اجتماع ذکر و نعت کی ترکیب بنائیں اِنْ شَآء اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ ہم بھی شرکت کریں گے۔ چنانچہ ہم نے اپنے شہر میں اجتماعِ ذکر و نعت کی ترکیب بنائی۔ سنتوں بھرے اجتماع کی برکت سے اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّوَجَلَّ ہمارے شہر میں ہفتہ وار سنتوں بھرے اجتماع کی ترکیب بن گئی۔ کچھ عرصہ بعد شیخ طریقت امیرِ اہلسنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُم العَالِیَہ فیضانِ مدینہ حیدر آباد تشریف لائے۔ اسلامی بہنوں کے لیے پردے میں رہ کر سننے کی ترکیب تھی۔ اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّوَجَلَّ مجھے بھی امیرِ اہلسنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُم العَالِیَہ کا رِقّت انگیز بیان سننے کی سعادت حاصل ہوئی۔ اجتماع کے اختتام پرمیں نے مدنی برقع پہن لیا۔ اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّوَجَلَّ  تادمِ تحریر مدنی کاموں کی سعادت حاصل کر رہی ہوں ۔

اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ کی امیرِاہلسنّت پَررَحمت ہواوران کے صد قے ہماری مغفِرت ہو۔

صَلُّوْاعَلَی الْحَبِیب!                                            صلَّی اللّٰہُ تعالٰی عَلٰی محمَّد

{12}عشقِ رسول سے بھر پور کلام

 



Total Pages: 8

Go To