Book Name:Naik Bannay aur Bananay kay Tariqay

مدنی قافِلے کیلئے ملی ہوئی رقم دوسرے دینی کاموں میں ۔۔۔۔۔؟

سُوال: مدنی قافِلے سفر کروانے کے مَدّ میں ملا ہوا چندہ دعوتِ اسلامی کے دیگر مدنی کاموں میں خرچ کیا جاسکتا ہے یا نہیں ؟

جواب: نہیں کیا جاسکتا۔ اُس کو الگ رکھنا ہوگا ، اگر دیگر مدنی کاموں میں خرچ کر دیا توتاوان و توبہ کی ترکیب بنانی ہو گی۔سَہولت اِسی میں ہے کہ کسی ایک مَدّ میں چندہ لینے کے بجائے دینے والے کی خدمت میں ہمیشہ یہ محتاط جملہ ذکر کردینے کی عادت بنالی جائے:برائے کرم!  آپ ہمیں ہر طرح کے نیک اور جائز کام میں خرچ کرنے کی اجازت عنایت فرما دیجئے۔

مالداروں کو چندہ سے اجتِماع میں لے جانا کیسا؟

سُوال: کسی اسلامی بھائی نے غریب اسلامی بھائیوں کوسالانہ بینَ الاقوامی سنتوں بھرے اجتِماع( صحرائے مدینہ مدینۃالاولیاء ملتان شریف)میں لے جانے کیلئے رقم پیش کی مگر  ’’ وکیل ‘‘  اُس رقم سے اپنے صاحِبِ حیثیَّت دوستوں کو لے گیا۔ اب نادِم ہے ، کیا کرے؟

جواب: چندہ جس مَدّ میں دیا جائے اُسی میں استِعمال کرنا واجِب ہے۔  ’’ وکیل  ‘‘  نے خِیانت کی۔ اِس کا تاوان ادا کرے یعنی جتنی رقم مالداروں پر خرچ کی اُتنی پلّے سے چندہ دِہَندہ (یعنی چندہ دینے والے)کو پیش کر دے اور توبہ بھی کرے ۔ یہ اُصول ہمیشہ یاد رکھئے کہ چندہ دینے والا شَریعت کے دائرے میں رَہ کر جیسا کہے ویسے ہی کرنا ہوتا ہے۔ اب جبکہ اُس نے غریبوں کی قید لگا دی تو غریبوں ہی کو دینا ہو گا اگر وہ صَرا  حَۃً(یعنی کُھلے لفظوں میں )کہدے، ’’  میری رقم سے فَقَط کرایہ ادا کرنا، تو اُس کی رقم سے صرف کرایہ ہی ادا کیا جائے گا،کھا پی نہیں سکتے ۔ اگر اس نے کہہ دیا:  ’’  فُلاں فُلاں کو اِس رقم سے سالانہ اجتِماع میں لے جاؤ   ‘‘  تو اب اُنہیں کو لے جاناہو گا کسی اور کو نہیں لے جا سکتے،اگر وہ نہ گئے یا کسی طرح رقم بچ گئی تو وہ رقم واپَس لوٹانی ہو گی ،  مخصوص عَلاقے والوں کو لے جانے کی صَراحت کر دی تو دوسرے عَلاقے والے کو نہیں لے جا سکتے۔ اَلغَرَض چندے میں اپنی طرف سے نہ کسی طرح کا تصرُّف کرے نہ ہی بِلا اجازتِ شَرعی اُس کا ایک لقمہ بھی خود کھائے نہ کسی کو کھلائے ورنہ آخِرت میں پکڑ ہوگی۔

 {…  باب نمبر2 }

 

 

مدنی قافلے کا جدول

اس باب میں:

مدنی قافلے کے جدول پر عمل کی برکتیں، مدنی قافلے کی تربیت کے بیانات، زادِ مدنی قافلہ، مدنی قافلے کا مختصر اور تفصیلی جدول، انفرادی کوشش کے مدنی پھول، انفرادی کوشش کے لئے ترغیبات، مدنی قافلے کے مختلف تربیتی حلقوں کے بارے میں اہم معلومات نیز علاقائی دورہ برائے نیکی کی دعوت اور صدائے مدینہ کا طریقہ، ان کے علاوہ مزید عنوانات بھی شامل ہیں۔

باب2:                            مدنی قافلے کا جدول

دُرُود شریف کی فضیلت

            شیخِ طریقت، امیرِ اہلسنت حضرت علامہ مولانا ابوبلال محمد الیاس عطاؔر قادری رضوی ضیائی   دامَتْ بَرکاتُھُمُ العالیَۃ اپنے رسالے  ’’ 101مدنی پھول ‘‘ میں نقل فرماتے ہیں کہ   رسولِ اکرم، نُورِمُجَسَّم ،  رَحمتِ عالَم ،  شہَنشاہِ بنی آدم  صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کا فرمانِ رحمت نشان ہے:  ’’     قِیامت کے روز  اللہ عَزَّوَجَلَّ کے عرش کے سِوا کوئی سایہ نہیں ہو گا، تین شخص  اللہ عزَّوَجَلَّ کے عرش کے سائے میں ہوں گے۔ عرض کی گئی:  یارسولَ اللّٰہ  صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  !  وہ کون لوگ ہوں گے؟  ارشاد فرمایا: (1)وہ شخص جو میرے اُمّتی کی پریشانی دُور کرے  (2) میری سُنّت کو زِندہ کرنے والا (3) مجھ پر کثرت سے دُرُود       شریف پڑھنے والا۔ ‘‘  (البدور السّافرۃ فی امور الا خرۃ للسیوطی ص ۱۳۱حدیث ۳۶۶ )

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیْب!                                                صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

مدنی قافلے کے جد ول پر عمل کی برکتیں

          میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو! جب ہم جدول پر عمل کریں گے تو اِنْ شَاءَ اللہ عزَّوَجَلَّ  ہمیں بہت سے فائدے اور برکتیں حاصل ہوں گی۔مثلاً

(1)جدول پر عمل کی برکت سے تمام کام مناسب وقت میں ہوسکیں گے، جس کی وجہ سے کسی کا وقت ضائع نہیں ہوگا۔

(2) شرکائے قافلہ کو خوب سیکھنے کا موقع ملے گا۔

(3) سفر کرنے والوں کی تربیت پر مکمل توجہ ہوسکے گی۔

(4) جدول پر عمل کا ذہن بن گیا تو اطاعت کرنے کا ذہن بھی بن جائے گا۔

(5) جدول پر عمل کی برکت سے کم از کم چار قسم کے اسلامی بھائیوں کومدنی قافلے کی برکات نصیب ہونگی:(۱) مدنی قافلے میں سفر کرنے والوں کو ۔۔۔۔۔(۲)دورانِ سفرمدنی قافلے کے ساتھ سفرمیں شامل ہونے والوں کو ۔۔۔۔۔(۳) جہاں مدنی قافلہ سفر کرکے پہنچے گا وہاں رہنے والوں کو۔۔۔۔۔(۴) واپس آنے کے بعد شرکائے قافلہ کے اپنے علاقے والوں کو۔۔۔۔۔

(6)شرکائے قافلہ کا دوبارہ سفر کے لئے بآسانی ذہن بن جائے گا۔

 



Total Pages: 194

Go To