Book Name:Naik Bannay aur Bananay kay Tariqay

خواب میں دیکھاتو سوال کیا  ’’ مَا فَعَلَ اللّٰہُ بِکَ ‘‘ یعنی  اللہ عَزَّوَجَلَّنے تمہارے ساتھ کیا  مُعاملہ فرمایا؟ یہ سُوال سن کر اس کے ہونٹوں پر مسکراہٹ آگئی اور وہ بلبل کی طرح شیریں آواز میں بولا: ’’ دنیا میں میں کوشش کیا کرتا تھا کہ میری زبان سے کسی کے بارے میں کوئی بُری بات نہ نکلے، نکیرین نے مجھ سے بھی کوئی سخت سوال نہ کیا، اور یوں میرا معاملہ بہت اچھا رہا۔‘‘ (بوستان سعدی،باب چہارم درتواضع،ص۱۴۹)

دعوتِ اسلامی کیا چاہتی ہے

     تبلیغِ قرآن وسنّت کی عالمگیر غیر سیاسی تحریک  ’’ دعوتِ اسلامی ‘‘  نفرتیں  مٹاتی اور محبتوں کے جام پلاتی ہے،د عوتِ اسلامی دورِ اَسلاف کی یاد تازہ کرنا چاہتی ہے، ہر اسلامی بھائی کو چاہیے کہ عاشقانِ رسول کے مدنی قافلوں میں سنتوں کی تربیت کے لیے سفر اورروزانہ فکرِ مدینہ کے ذریعے مدنی انعامات کا رسالہ پر کر کے ہر مدنی ماہ کے ابتدائی دس دن کے اندر اندر اپنے یہاں کے ذمہ دار کو جمع کروانے کا معمول بنائے، اِنْ شَآءَ اللہ  عَزَّ وَجَلَّ بطفیلِ مصطفی صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ حُسنِ اخلاق کا جذبہ بیدار ہوگا اگر ایسا ہوگیا تو ہمارا مُعاشرہ ایک بار پھر مدینۂ منوَّرہ کے دلکش وخوشگوار، خوشبودار و سدا بہار رنگ برنگے پھولوں سے لدا ہوا حسین گلزار بن جائے گا۔آپ کی ترغیب کے لیے مدنی بہار پیش کرتا ہوں :

اَلْحَمْدُ لِلّٰہ میں بدل گیا !

            شالیمار ٹاؤ ن (مرکزالاولیاء لاہور۔پاکستان)کے ایک اسلامی بھائی کا کچھ یوں بیان ہے میں بے حد بگڑا ہوا انسان تھا، فلموں ڈراموں کا رسیاہونے کے ساتھ ساتھ جوان لڑکیوں کے ساتھ چھیڑخانیاں ،  اوباش نوجوانوں کے ساتھ دوستیاں ،  رات گئے تک ان کے ساتھ آوارہ گردیاں وغیرہ میرے معمولات تھے۔ میری حرکاتِ بد کے باعث خاندان والے بھی مجھ سے کتراتے، اپنے گھروں میں میری آمد سے گھبراتے نیز اپنی اولاد کو میری صحبت سے بچاتے تھے، میری گناہوں بھری خزاں رسیدہ شام کے صبحِ بہاراں بننے کی سبیل یوں ہوئی کہ ایک دعوتِ اسلامی والے عاشقِ رسول کی مجھ پر میٹھی نظر پڑ گئی اس نے نہایت ہی شفقت کے ساتھ اِنفرادی کوشش کرتے ہوئے مجھے مدنی قافلے میں سفر کی ترغیب دلائی، بات میرے دل میں اتر گئی اور میں نے مدنی قافلے میں سفر کی سعادت حاصل کی،   اَلْحَمْدُ   للّٰہ عزَّوَجَلَّ   مدنی قافلوں میں عاشقانِ رسول کی صحبتوں نے مجھ پاپی و بدکار کے دل میں مدنی انقلاب برپا کر دیا، گناہوں سے توبہ کی توفیق اور سنتوں بھرے مدنی لباس کا جذبہ ملا،سر پر سبز سبز عمامہ سجا اور مجھ جیسا گنہگار  سنتوں کے مدنی پھول لٹانے میں مشغول ہو گیا،جو عزیز و اقربا دیکھ کر کتراتے تھے،  اَلْحَمْدُ للّٰہعَزَّوَجَلَّ   اب وہ گلے لگاتے ہیں ، پہلے میں خاندان کے اندر بد ترین تھا،   اَلْحَمْدُ  للّٰہعَزَّوَجَلَّ دعوتِ اسلامی کے مدنی قافلے کی برَکت سے اب عزیز ترین ہو گیا ہوں ۔    ؎

جب تک بکا نہ تھا تو کوئی پوچھتا نہ تھا

تم نے خرید کر مجھے انمول کر دیا

(فیضانِ سنت،باب فیضانِ رمضان،جلد۱،ص۱۰۹۱)

          پیارے اسلامی بھائیو!  بیان کو اِختِتام کی طرف لاتے ہوئے سنّت کی فضیلت اور چند سنّتیں اور آداب بیان کرنے کی سعادت حاصِل کرتا ہوں ۔

          تاجدارِ رسالت، شَہَنْشاہِ نُبُوَّت، مصطفی جانِ رحمت، شمعِ بزمِ ہدایت ، نوشۂ بزمِ جنت صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ کا فرمانِ جنت نشان ہے: جس نے میری سنّت سے مَحَبَّت کی اُس نے مجھ سے مَحَبَّت کی اور جس نے مجھ سے مَحَبَّت کی وہ جنت میں میرے ساتھ ہوگا۔ ( تاریخ مدینۃ دمشق لابن عساکر، انس بن مالک ،  ج۹ ،  ص۳۴۳ )

            لہٰذا مُصافَحَہ کے 7مدنی پھول قبول فرمائیے،(ساس کتاب کے صفحہ نمبر549سے بیان کریں )

٭٭٭٭٭

  باب5:

       دعائیں ،  سنَّتیں اور آداب

دعا کی اہمیت

  پیارے پیارے آقا صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کا فرمانِ عالیشان ہے:

اَلدُّعَآئُ مُخُّ الْعِبَادَۃ            ترجمہ: دعا عبادت کا مغز ہے۔

                                                                                        (سنن الترمذی  ج۵  ص۲۴۳ حدیث ۳۳۸۲)

 دعا مومن کا ہتھیار ہے

            تاجدارِ مدینہ صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے ارشاد فرمایا:  ’’ اَلدُّعَآءُ سِلَاحُ الْمُْؤْمِنِ وَعِمَادُ الدِّیْنِ وَ نُوْرُ السَّمَاوَاتِ وَالْاَرْضِ ‘‘ ترجمہ:  دعامومن کا ہتھیار، دین کا ستون اور آسمان وزمین کا نور ہے۔  (المستدرک  للحاکم  ج۲ ص۱۶۲ حدیث  ۱۸۵۵)

            ایک اور حدیث پاک میں ارشادفرمایا: ’’ کیا میں تمہیں وہ چیز نہ بتاؤ ں جو تمہیں تمہارے دشمن سے نجات دے اور تمہارا رزق وسیع کر دے، رات دن اللّٰہ تعالٰی سے دعا مانگتے رہو کہ دعا مومن کا ہتھیار ہے۔ ‘‘     (مجمع الزوائد ج۱۰  ص

Total Pages: 194

Go To