Book Name:Naik Bannay aur Bananay kay Tariqay

(9)    تمام اسلامی بھائیوں کو بس یہی دُھن ہونی چاہئے کہ جس طرح بھی بن پڑے ہم لوگوں کو مدنی قافلوں کیلئے تیار کریں ۔

(10)  مجھے مدنی قافلوں میں سفر کرنے والوں سے پیارہے۔

(11)  ہماری منزل مدنی قافلوں کے ذریعے پوری دنیا میں سنتوں کی بہاریں عام کرناہے ۔

(12)  دنیاوی یا تنظیمی کام میں چاہے جتنی بھی مصروفیت ہو جب تک کوئی مانعِ شرعی نہ ہو ہر ماہ ۳ دن کے مدنی قافلے میں ضرور سفر کیجئے۔

(13)  اسلامی بھائیوں کے ساتھ خوش طبعی کے لئے ہونے والی گفتگو میں بھی مدنی قافلوں کے واقعات سناتے رہئے۔

(14)  اگر وسعت ہوتوہر ماہ یا ہر دوسرے ماہ ایک اسلامی بھائی کو اپنے خرچ پر سفر بھی کروائیے۔

(15)  اِدھر اُدھر کی باتوں کے بجائے مدنی قافلوں ہی کی باتیں کیجئے۔ آپ کا اوڑھنا بچھونا بس مدنی قافلہ مدنی قافلہ مدنی قافلہ مدنی قافلہ مدنی قافلہ ہو۔

(16)  مشہور مزارات اور بڑی مساجد میں لوگ زیادہ ہوتے ہیں ،  لہٰذا وہاں ایسے اسلامی بھائیوں کی باقاعدہ ذمہ داری لگائی جائے کہ وہ مدنی قافلوں میں سفر کیلئے انفرادی کوشش کے ذریعے اسلامی بھائیوں کو تیار کریں ۔

(17)  دوسروں کو ترغیب دلانے کیلئے خود سراپا ترغیب بننا پڑتا ہے۔

(18)  دعوت ِ اسلامی کی تمام مجالس بشمول مرکزی مجلس شوریٰ کا ہر نگران ورکن اور ہر ذمہ دار ہرماہ تین دن کے مدنی قافلے میں جدول کے مطابق سفر کرے ۔

            مدنی قافلے یا تنظیمی کاموں کے لئے دوسرے شہر یا دوسرے ملک جائے توصرف مسجد ہی میں معتکف رہے ،  حسبِ ضرورت باہر نکلے تو پھر مسجد میں آکر معتکف ہوجائے، اپنے جملہ مدنی مشورے بھی مساجد میں کیجئے ۔ہردم مساجد کو آباد رکھئے۔ اِنْ شَاءَ  اللہ  عَزَّ وَجَلَّ آپ کی قبر میٹھے میٹھے مصطفیٰ صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کے جلووں سے آباد ہوگی۔

 (19) کسی بھی مشاورت کا مدنی مشورہ ہوتواس میں اسی ماہ کے فضائل اور نفلی روزوں کی ترغیب دلائی جائے ،  ہفتہ وار اجتماع میں بھی یہی ترکیب رکھی جائے ،  اس یاد دہانی سے اِنْ شَاءَ  اللہ  عَزَّ وَجَلَّ عمل کا جذبہ بڑھے گا۔

(20)  بیان یامدنی مذاکرہ کی کم از کم ایک کیسیٹ روزانہ سننے کی عادت بنائیے ،  اس مدنی کام میں اسلامی بھائیوں سے تعاون کے لئے ایک آسان طریقہ یہ بھی ہے کہ حلقہ سطح پر ایک لائبریری بنام المدینہ لائبریری بنائی جائے جس میں کنزالایمان ، مکتبۃ المدینہ کی طرف سے جاری کردہ رسائل، بیانات ،  اور مدنی مذاکروں کی کیسٹیں رکھی جائیں تاکہ تمام اسلامی بھائی پڑھ اور سن سکیں ۔اس کیلئے حلقہ کی مسجد میں فنائے مسجد یا مسجد میں ایک الماری رکھی جائے اور ایک وقت مقررکیا جائے جس کے مطابق روزانہ 25یا 30منٹ لائبریری کھولی جائے اور اس کے انتظام کیلئے ایک مجلس بنائی جائے۔جو اسلامی بھائی چاہے وہ ایک دن یا سا ت دن کے لئے رسالہ یاکیسیٹ لے جائے جس کا اندراج ایک رجسٹر میں کیا جائے۔پھر جب تک واپس نہ لائے ، مزید رسالے اور کیسٹیں نہ دی جائیں ۔

 (21)  نجی طور پر اجتماعِ ذکرونعت کرنے والوں کو بھی چاہئے کہ شرکاء میں رسائل وبیانات کی کیسٹیں تقسیم فرمایا کریں۔ 

(22)  جلوس میلاد النبی صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  میں لنگر ِ رسائل کا اہتمام کیجئے اور اپنے اپنے پلے سے مکتبۃ المدینہ سے شائع شدہ سنتوں بھرے رسائل خوب خوب تقسیم کیجئے ۔آپ کا بانٹا ہوا رسالہ پڑھ کر اگر ایک فرد بھی نمازی یاسنتوں کا عادی بن گیا یادعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول سے وابستہ ہوگیا تو اِنْ شَاءَ  اللہ  عَزَّ وَجَلَّ آپ کا دونوں جہانوں میں بیڑا پار ہوگا ۔

(23)  جہاں کہیں بھی مدنی مرکزفیضانِ مدینہ ہو وہاں ہر وقت ایک خیر خواہ اسلامی بھائی ہو جوہر آنے جانے والے، جانے انجانے سے خوش اخلاقی سے پیش آئے اور دلجوئی اور خیر خواہی کرتے ہوئے اس پرانفرادی کوشش کرے ۔

(24)  اگر شرعی رکاوٹ نہ ہو تو دین کی خاطر گھر سے باہرراہِ خدامیں رہنے کی عادت بنائیے ۔میں نے گھر میں مقیّد رہ کر نہیں ، کثرت کے ساتھ گھر سے باہر رہ کر باذنِ اللّٰہ دین کی خدمت کی سعادت پائی ہے ۔

(25)  مبلغین دورانِ بیان رسالوں اورسنتوں بھرے بیانات کی کیسٹیں سننے کی ترغیب دلائیں ،  مثلاً اگر کسی رسالے سے بیان کریں تو اس کے بارے میں لوگوں کو بتائیں کہ میں نے فلاں رسالے سے بیان کیا ہے ، آپ اس کو ھدیۃً حاصل کر کے پڑھئے اور تقسیم کیجئے ۔

(26)  مدنی درس کا طریقہ جو ’’  فیضانِ سنت جلد اوّل ‘‘  میں ہے اس کے مطابق بیٹھ کر درس دیجئے۔(اس کتاب میں بھی یہ طریقہ صفحہ ۱۹۹پردرج کر دیا گیا ہے)

(27)  خادمینِ فیضان مدینہ اور امام ومؤذن ،  ٹیلیفون آپریٹرزاور مکتبۃ المدینہ کا عملہ بھی روزانہ کیسیٹ سننے کا اہتمام فرمائیں ۔

(28)  مدنی مرکز میں امام اور مؤذن دعوتِ اسلامی کے سر کی حیثیت رکھتے ہیں ۔

             لہٰذا صرف ایسے اسلامی بھائیوں کو یہ ذمہ داری سونپی جائے جو مدنی قافلہ کورس کرچکے ہوں ۔ جو لوگوں کواجتماع میں کامل شرکت اور مدنی قافلے میں ہر ماہ سفر کی ترغیب دلاتے رہیں ۔یہ ایسے ملنسار ہوں کہ جو اجنبی آجائے وہ اس کو مدنی قافلے کا مسافر بنادیں ۔

(29)  جب تک ہم خود مدنی کام نہیں کریں گے تو دوسروں کو کس طرح پابند کریں گے؟

(30)  حقیقی کارکردگی وہ ہے جس سے لوگوں میں عمل کا جذبہ پیداہواورآخرت کی برکتیں ملیں ۔

(31)  تمام ذمہ دار اسلامی بھائی  ’’ دلجوئی کے فضائل  ‘‘  پر مشتمل بیان کی کیسٹ ضرور سن لیں ۔

نوٹ: مدنی انعامات سے متعلق مزید فرامینِ امیرِاہلسنّت جاننے کے لئے صفحہ نمبر697 ملاحظہ فرمایئے۔

 



Total Pages: 194

Go To