Book Name:163 Madani Phool

نیکی بڑھاتی اور معدہ دُرُست کرتی ہے (جَمْعُ الْجَوامِع لِلسُّیُوطی ج۵ ص۲۴۹حدیث ۱۴۸۶۷)خ حضرتِ سیِّدُنا عبدا لوہّاب شَعرانی قُدِّسَ سرُّہُ النُّورانی نقل کرتے ہیں : ایک بار حضرت ِسیِّدنا ابو بکر شبلی بغدادی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الھادِیکو وضو کے وَقت مِسواک کی ضَرورت ہوئی، تلاش کی مگر نہ ملی،لہٰذا ایک دینار (یعنی ایک سونے کی اشرفی) میں مِسواک خرید کر استعمال فرمائی۔ بعض لوگوں نے  کہا : یہ تو آپ نے بَہُت زیادہ خرچ کر ڈالا! کہیں اتنی مہنگی بھی مِسواک لی جاتی ہے؟ فرمایا :بیشک یہ دنیا اور اس کی تمام چیزیں اللہ     عَزَّوَجَلَّ کے نزدیک مچھّر کے پر برابر بھی حیثیَّت نہیں رکھتیں ،اگر بروزِ قِیامت اللہ     عَزَّوَجَلَّ نے مجھ سے یہ پوچھ لیا تو کیا جواب  دوں گا کہ : ’’ تو نے میرے پیارے حبیب کی سنّت (مِسواک) کیوں ترک کی؟ جو مال و دولت میں نے تجھے دیاتھااُس کی حقیقت تو(میرے نزدیک)  مچھر کے پر برابر بھی نہیں تھی ،تو آخر ایسی حقیر دولت اِس عظیم سنّت ( مِسواک) کو حاصل کرنے پر کیوں خرچ نہیں کی؟‘‘(مُلَخَّص ازلواقح الانوار ص ۳۸)خسیِّدنا امام شافِعی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ القَوِیفرماتے ہیں :چار چیزیں عقل بڑھاتی ہیں : فضول باتوں سے پرہیز،مِسواک کا استِعمال،صُلَحا یعنی نیک لوگوں کی صحبت اور اپنے علم پر عمل کرنا(اِحیاءُ الْعُلوم ج ۳ص۲۷)خ مِسوا ک پیلو یا زیتون یا نیم وغیرہ کڑوی لکڑی کی ہوخمِسواک کی موٹائی چھنگلیا یعنی چھوٹی اُنگلی کے برابر ہوخ مِسوا ک ایک بالِشت سے زیادہ لمبی نہ ہو ورنہ اُس پر شیطان بیٹھتا ہیخ اِس کے رَیشے نرم ہوں کہ سخت رَیشے دانتوں اور مَسُوڑھوں کے درمیان خَلا (GAP)کا باعث

 



Total Pages: 40

Go To