Book Name:Wasail e Bakhshish

’’درسِ نظامی‘‘ سے فارغ ہونے والوں   کیلئے 25اشعار

مرحبا ثاقِب کے سرپرکیا سجی دَستار ہے

ہے کرم اللّٰہ کا اور رحمتِ سرکار ہے

تَہنیت دستار بندی کی کرو بھائی قبول

پیش کرتاہوں  تمہیں  میں  تحفتہً کچھ’’مَدنی پھول ‘‘

گرچِہ دستارِ فضیلت کو ہے تم نے پالیا

بارگاہِ حق میں   بھائی! کیا خبر ہے حال کیا

علم جو پایا ہے تم نے عمر بھر باقی رکھو!

تم پڑھاتے بھی رہو تا ([1])بھول جانے سے بچو

جو بُھلا دے علم کیوں   کر وہ بھلا عالم رہا

گو  سند ہے پاس لیکن نام کا عالم رہا

اعلیٰ حضرت کے نہ مسلک کو کبھی بھی چھوڑنا

ان کے اَعدا سے نہ ہرگز کوئی رِشتہ جوڑنا

 

سَلْبِ ایماں   پُرسِشِ قبر و قِیامت سے ڈرو

علم کو کافی نہ سمجھو نیکیاں   کرتے رہو

علمِ دیں   سے ہو فَقَط مقصود مولیٰ کی رِضا

دُور رہنا بھائی نذرانوں   کے لالچ سے سدا

سُنِّی عالِم کی سدا تَجْہِیل سے بچتے رہو

بے سبب  تَغلیط اور تنقید بھی تم مت کرو

دیکھنا مت تم حَقارت سے کسی اَن پڑھ کو بھی

کیا خبر پیشِ خدا مقبول بندہ ہو وُہی

علم پر آنے لگے تجھ کو تکبُّربھائی گَر

 



[1]    یعنی تاکہ ۔



Total Pages: 406

Go To