Book Name:Wasail e Bakhshish

ابرِرَحمت اس پہ برسا زور سے ملتان میں 

یاخدا وہ حج کرے میٹھا مدینہ دیکھ لے

غور سے ہر اک بیاں   جو بھی سنے ملتان میں 

چور ڈاکو آگئے آکر ہِدایت پا گئے

بے نَماز آکر نَمازی بن گئے ملتان میں 

 سنّتوں   سے سب کے چہرے جگمگائیں   گے یہاں 

اِنْ شَاءَ اللّٰہ مصطَفٰے کے فیض سے ملتان میں 

 

سنّتوں   کی تربیت کے خوب مدنی قافلے

چار سُو ہوں   گے روانہ خیر سے ملتان میں 

’’مدنی انعامات‘‘ کی دھومیں   مچاتے جائیں   گے

سنّتوں   کی تربیت کے قافلے ملتان میں 

فضلِ رب سے اہلِ حق کا بعدِ حج سب سے بڑا

اجتماعِ پاک ہے یہ خیر سے ملتان میں 

بخش دے یارب! سبھی کو اور ان کو بالخصوص

آئے ہیں   کرنے سفر جو دور سے ملتان میں 

کاش! عشقِ مصطَفٰے میں   یاخدا تڑپا کروں 

آنکھ تیرے خوف سے روتی رہے ملتان میں 

رکنِ عالم اور بہاء الدّین کے صدقے خدا

ہو قبول اس کی دعا جو بھی کرے ملتان میں 

اِنْ شَاءَ اللّٰہ  ہر   دعا   عطار ؔ  اب  مقبول  ہے

ہیں   خدا کی رَحمتوں   کے در کُھلے ملتان میں 

 

سنت کی بہار آئی فیضانِ مدینہ میں   

(حیدرآباد، باب الاسلام (سندھ) میں   ’’دعوت اسلامی ‘‘ کے مدنی مرکز’’ فیضان مدینہ ‘‘ میں   ہونے والے افتتاحی اجتماع (شبِ جمعہ ۷جُمادَی الاولیٰ ۱۴۱۳ھ)کے پر



Total Pages: 406

Go To