Book Name:Wasail e Bakhshish

 

پاؤگے نعتِ محبوب کی دھوم دھام،          مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

کر کے ہمّت مسلمانو آجاؤ تم،                          مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

اُخروی دولت آؤ کما جاؤ تم،                           مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

درد ٹانگوں   میں  ہو، دَردگُھٹنوں   میں   ہو،             مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

پیٹ میں   درد ہو یا کہ ٹَخنوں   میں   ہو،                 مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

سنّتوں   کی تم آ کر کے سوغات لو،                     مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

آؤ بٹتی ہے رَحمت کی خیرات لو،                      مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

گورِ تِیرہ کو تم جگمگانے چلو،                            مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

راحتیں   روزِ محشر کی پانے چلو،                         مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

چھوٹ جائے گی فلموں   ڈِراموں   کی لَت،          مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

خوش خدا ہو گا بن جائیگی آخِرت،                  مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

تنگ دستی کا حل بھی نکل آئے گا،                   مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

روزگار ان شائَ اللّٰہ مل جائے گا،                   مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

عاشقانِ رسول آؤ دیں   گے بیاں  ،                    مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

دور ہوں   گی عبادات کی خامیاں  ،                    مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

 

باجماعت نَمازوں   کا جذبہ ملے،                        مَدنی ماحول میں   کرلو تم اعتِکاف

دِل کا پَژمُردہ غُنچہ خوشی سے کِھلے،                   مَدنی ماحول میں   کر لوتم اعتِکاف

سیکھنے زندَگی کا قرینہ چلو،                               مدنی ماحول میں   کر لوتم اعتِکاف

دیکھنا ہے جو میٹھا مدینہ چلو،                            مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

ان شائَ اللّٰہ بھائی سُدھر جاؤ گے،                    مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

مرضِ عصیاں   سے چھٹکارا تم پاؤ گے،                 مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

دل میں   بس جائیں   آقا کے جلوے مُدام،           مَدنی ماحول میں   کر لو تُم اعتِکاف

دیکھو مکّے مدینے کے تم صبح و شام                   مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

صحبتِ بد میں   رہنے کی عادت چُھٹے،                  مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

خصلتِ جُرم و عصیاں   تمہاری مِٹے،                  مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

 



Total Pages: 406

Go To