Book Name:Wasail e Bakhshish

چوٹ کھا جائے گا ا ِک نہ اِک روز دل،       مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

فضلِ رب سے ہدایت بھی جائے گی مل،        مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

فضلِ رب سے گناہوں   کی کالَک دُھلے،       مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

نیکیوں   کا تمھیں   خوب جذبہ ملے،             مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

گرچِہ دل میں   ہے فیشن کی اُلفت بھری،     مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

عمر آیندہ گزرے گی سنَّت بھری،            مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

 

بھائی گر چاہتے ہو ’’نَمازیں   پڑھوں  ‘‘،              مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

نیکیوں  میں   تمنّا ہے ’’آگے بڑھوں  ‘‘،              مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

تم کو راحت کی نعمت اگر چاہئے،                     مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

بندگی کی بھی لذّت اگر چاہئے،                      مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

موت فضلِ خدا سے ہو ایمان پر،                   مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

رب کی ر حمت سے جنّت میں   پاؤ گے گھر،          مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

رحمتیں   لُوٹنے کے لئے آؤ تم،                       مَدنی ماحول میں  کرلو تم اعتِکاف

سنّتیں   سیکھنے کے لئے آؤ تم،                        مَدنی ماحول میں   کرلو تم اعتِکاف

گر تمنّا ہے آقا کے دیدار کی،                       مَدنی ماحول میں   کر لوتم اعتِکاف

ہوگی میٹھی نظر تم پہ سرکار کی،                      مدنی ماحول میں   کر لوتم اعتکاف

آؤ آ کر گناہوں   سے توبہ کرو،                       مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

رَحمتِ حق سے دامن تم آ کر بھرو،                مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

ختم ہوگی شرارت کی عادت چلو،                   مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

دُور ہو گی گناہوں   کی شامت چلو،                  مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

بگڑے اَخْلاق سارے سنور جائیں   گے،           مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

 

بس مزہ کیا مزے کو مزے آئیں   گے،        مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

ولولہ دیں   کی تبلیغ کا پاؤ گے،                     مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

فضلِ رب سے زمانے پہ چھا جاؤگے،          مَدنی ماحول میں   کر لو تم اعتِکاف

 



Total Pages: 406

Go To