Book Name:Wasail e Bakhshish

[یانبی سلامٌ علیکَ یارسول سلامٌ علیکَ

یاحبیب سلامٌ علیکَ صَلَوٰۃُ اللّٰہِ علیکَ]

جشنِ میلادُ النبَّی ہے، نور کی چادر تنی ہے

روشنی ہی روشنی ہے، دُھوم ہر جانب مچی ہے

[یانبی سلامٌ علیکَ یارسول سلامٌ علیکَ

یاحبیب سلامٌ علیکَ صلوٰۃُ اللّٰہِ علیکَ]

آج ہے صبحِ بہاراں  ، جھومتے ہیں  سب مسلماں 

گِھر چکا ہے اَبرِ باراں  ، رَحمتوں   سے بھرلودا ماں 

[یانبی سلامٌ علیکَ یارسول سلامٌ علیکَ

یاحبیب سلامٌ علیکَ صلوٰۃُ اللّٰہِ علیکَ]

 

آمِنہ بی بی کے گھرپر، آگیا نبیوں   کا افسر

جھک گیا ہے کُفر کا سر، پڑ گئی ہے دُھوم گھرگھر

[یانبی سلامٌ علیکَ یارسول سلامٌ علیکَ

یاحبیب سلامٌ علیکَ صلوٰۃُ اللّٰہِ علیک]

آمِنہ بی کے دُلارے، اے دُکھی دل کے سہارے

کون ہے جو اب سنوارے، میرے بگڑے کام سارے

[یانبی سلامٌ علیکَ یارسول سلامٌ علیکَ

یاحبیب سلامٌ علیکَ صلوٰۃُ اللّٰہِ علیک]

تم مکینِ لامکاں   ہو، اور حق کے رازداں   ہو

اِذنِ رب سے غیب داں  ہو، کیا ہے جو تم سے نِہاں  ([1])  ہو

[یانبی سلامٌ علیکَ یارسول سلامٌ علیکَ

یاحبیب سلامٌ علیکَ صلوٰۃُ اللّٰہِ علیک]

اوّل و آخِر تم آقا، باطِن و ظاہر تم آقا

حاضِر و ناظر تم آقا، طیِّب و طاہِر تم آقا

[یانبی سلامٌ علیکَ یارسول سلامٌ علیکَ

یاحبیب سلامٌ علیکَ صلوٰۃُ اللّٰہِ علیکَ]

 



[1]     چھپا ہوا  پوشیدہ ۔



Total Pages: 406

Go To