Book Name:Wasail e Bakhshish

دین کے واسِطے دیکے وقت                            آخِرت کا بھلا کیجئے

سُنّتیں   سیکھنے کیلئے                                      قافِلوں   میں   چلا کیجئے

چاہتے ہو کہ راضی ہو رب                             مصطَفٰے کا کہا کیجئے

ان کی یادوں   میں   کھو جائیے                           مصطَفٰے مصطَفٰے کیجئے

مجھ کو آقا عطا اپنا عِشق                                اور خوفِ خدا کیجئے

اہلِ ایماں   کو فیشن سے پاک                           کیجئے مصطَفٰے کیجئے

ہو خَزاں   دور آئے بہار                                دل کا گلشن ہرا کیجئے

کاش! عطارؔ کی مغفِرت

ہو کرم سروَرا کیجئے

 

سبز گنبد کی زیارت کیجئے

سبز گُنبد کی زیارت کیجئے                       زائرو! سامانِ راحت کیجئے

گنبدِ خَضرا کے جلوے دیکھ کر                  خوب روشن اپنی قسمت کیجئے

آگیا میٹھا مدینہ آگیا                            جھوم کر خوب ان کی مِدحت کیجئے

مسجدِنبوی میں   ہر دم بھائیو!                     دل لگا کر اب عبادت کیجئے

زائرو! رو رو کر ان کے سامنے                 پیش اپنی اپنی حاجت کیجئے

قلبِ مُضطَر چشمِ تَر سوزِ جگر                   یانبی! مجھ کو عنایت کیجئے

اَزپئے احمدرضا مجھ کو عطا                       سُنّیت پر اِستِقامت کیجئے

ازپئے غوثُ الورٰی یامصطَفٰے                  میرے ایماں   کی حفاظت کیجئے

از طفیلِ مرشدی دل سے مِرے              دُور دنیا کی مَحبَّت کیجئے

فاطِمہ زَہرا کا صَدقہ مجھ سے دور                 نفس و شیطاں   کی شرارت کیجئے

دُور غم دنیا کے فرما دیجئے                      غم مدینے کا عنایت کیجئے

 

اپنے اَخلاقِ کریمہ سے مجھے                   ایک ذرّہ ہی عنایت کیجئے

دردِ عِصیاں   کی دوا  کیجے عطا                   عاصِیوں   پر چشمِ رَحمت کیجئے

 



Total Pages: 406

Go To