Book Name:Wasail e Bakhshish

یہ عرض گنہگار کی ہے شاہِ زمانہ

جب آخِری وَقت آئے مجھے بھول نہ جانا

سکرات کی جب سختیاں   سرکار ہوں   طاری

لِلّٰہ!   مجھے   اپنے   نظاروں    میں    گمانا

ڈر لگتا ہے ایماں   کہیں   ہو جائے نہ برباد

سرکار بُرے خاتمے سے مجھ کو بچانا

جب روح مِرے تن سے نکلنے کی گھڑی ہو

شیطانِ لعیں   سے مِرا ایمان بچانا

جب دم ہو لبوں   پر اے شَہَنشاہِ مدینہ

تم جلوہ دکھانا  مجھے کلمہ بھی پڑھانا

آقا مِرا جس وَقت کہ دم ٹوٹ رہا ہو

اُس وَقت مجھے چہرۂ پُرنور دِکھانا

 

سرکار! مجھے نَزع میں   مت چھوڑنا تنہا

تم آکے مجھے سورۂ یاسین سنانا

جب گورِ غریباں   کو چلے میرا جنازہ

رَحمت کی رِدا اس پہ خدارا تم اُڑھانا

جب قبر میں   اَحباب چلیں   مجھ کو لِٹا کر

اے پیارے نبی گور کی وَحشت سے بچانا

طے خیرسے تدفین کے ہوں  سارے مَراحِل

ہو قبر کا بھی لطف سے آسان دَبانا

جس وَقت نکیرین کریں   آ کے سُوالات

آقا مجھے تم آ کے جوابات سکھانا

سُن رکّھا ہے ہوتا ہے بڑا سخت اندھیرا

تُربت میں   مِری نُور کا فانوس جلانا

 



Total Pages: 406

Go To