Book Name:Wasail e Bakhshish

 

کرم ہوجان کوہے سخت خطرہ یارسولَ اللّٰہ

کرم ہو جان کو ہے سخت خطرہ یارسولَ اللّٰہ

نہ پِس جائے کہیں   ناچیز ذرّہ  یارسولَ اللّٰہ

بُلاؤں   کس طرح میں   اپنی کُٹیا میں   تمہیں   سروَر

کہ اس قابِل نہیں   ہے میرا حُجرہ  یارسولَ اللّٰہ

اگر چشمِ کرم ہو تو تَلاطُم خیز موجوں   سے

ابھی ہو پار میرا ڈوبا  بَجْرا یارسولَ اللّٰہ

میں  اِس دنیائے فانی میں  بھی قبرو حشر و جنّت میں 

ہر اِک جا پر لگاؤں   گا یہ نعرہ  یارسولَ اللّٰہ

یقینا جس کے آگے چودہویں   کا چاند شرمائے

تمہارا ہے وہ چہرہ نِکھرا نِکھرا  یارسولَ اللّٰہ

کرم سے تم بلاتے ہو کرم ہی سے تم آتے ہو

تمہارے ہی کرم سے بخت سنورا   یارسولَ اللّٰہ

 

میں   بن جاؤں   گا دیوانہ میں   ہوجاؤں   گا مستانہ

عطا ہو عشق کا گر ایک ذرّہ  یارسولَ اللّٰہ

تمہاری یاد میں   رویا کروں   تڑپا کروں   کر دو

عنایت اپنے غم کا زخم گہرا  یارسولَ اللّٰہ

رُلائے تیرا غم، دنیا کے غم میں   میرے آنسو کا

نہ ہو برباد آقا کوئی قطرہ  یارسولَ اللّٰہ

بلا لو گُنبَدِ خَضرا کی ٹھنڈی ٹھنڈی چھاؤں   میں 

مدینے کا دکھا دو مجھ کو صَحر ا  یارسولَ اللّٰہ

سعادت کربلا کی حاضِری کی بھی عنایت ہو

دکھا دیجے مجھے بغداد وبصرہ   یارسولَ اللّٰہ

 



Total Pages: 406

Go To