Book Name:Wasail e Bakhshish

نہ ہو استاد کو مجھ سے شکایت یارسولَ اللّٰہ

میں  گانے باجوں   اور فلموں   ڈِراموں   کے گنہ چھوڑوں 

پڑھوں   نعتیں   کروں   اکثر تلاوت یارسولَ اللّٰہ

 

حسد، وعدہ خِلافی، جھوٹ، چُغلی، غیبت و تہمت

مجھے ان سب گناہوں   سے ہو نفرت یارسولَ اللّٰہ

مِرے اَخلاق اچھے ہوں  مرے سب کام اچھے ہوں 

بنا دو مجھ کو تم پابندِ سنّت یارسولَ اللّٰہ

ضَرورت سے زِیادہ مال و دولت کا نہیں   طالِب

رہے بس آپ کی نظرِعنایت یارسولَ اللّٰہ

رہیں  سب شاد گھروالے شہا تھوڑی سی روزی پر

عطا ہو دولتِ صَبر و قَناعَت یارسولَ اللّٰہ

سب اَہلِ حشر محشر میں   اُنہی کو ڈھونڈتے ہونگے

پکاریں   گے سبھی روزِقِیامت یارسولَ اللّٰہ

بَہُت کمزور ہُوں   قابِل نہیں   ہرگز عذابوں   کے

خدارا ساتھ لیتے جانا جنّت یارسولَ اللّٰہ

مجھے تم یارسولَ اللّٰہ دے دو جذبۂ تبلیغ

شہا! دیتا پھروں   نیکی کی دعوت یارسولَ اللّٰہ

شہا! عطارؔ پر ہر آن رَحمت کی نظر رکھنا

کرے دن رات یہ سنّت کی خدمت یارسولَ اللّٰہ

 

کروں   ہر آن میں   تیری اِطاعت یارسولَ اللّٰہ

کروں   ہر آن میں   تیری اِطاعت یارسولَ اللّٰہ

پئے مرشِد بنا دے نیک سیرت  یارسولَ اللّٰہ

اندھیری قبر ہے اور ہائے! میں   بِالکل اکیلا ہوں 

اب آبھی جاؤ اے  مہرِ رِسالت!  یارسولَ اللّٰہ

بقیعِ پاک میں   سو جاؤ ں   میں   آرام سے اے کا ش!

مُیَسَّر آئے گی یوں   تیری قُربَت   یارسولَ اللّٰہ

 



Total Pages: 406

Go To