Book Name:Wasail e Bakhshish

میں   بچنا چاہتا ہوں   ہائے! پھر بھی بچ نہیں   پاتا

گناہوں   کی پڑی ہے ایسی عادت یارسولَ اللّٰہ

کمر اعمالِ بدنے ہائے! میری توڑ کر ر کھ دی

تباہی سے بچالو جانِ رَحمتیارسولَ اللّٰہ

مِرے منہ کی سیاہی سے اندھیری رات شرمائے

مِرا چِہرہ ہو تاباں   نورِ عزّت یارسولَ اللّٰہ

بوقتِ نَزع آقا ہو نہ جاؤں   میں   کہیں   برباد

مِراایمان رکھ لینا سلامت یارسولَ اللّٰہ

 

ترے رب کی قسم میں   لائقِ نارِ جہنَّم ہوں 

بچا سکتی ہے بس تیری شَفاعتیارسولَ اللّٰہ

یہاں   جیسے ہماری عیب پوشی آپ کرتے ہیں 

وہاں   بھی آپ رکھ لیجے گا عزَّت یارسولَ اللّٰہ

فَسادِ نفسِ ظالم سے بچالو ازپئے شَیخَین

کر وشیطان سے میری حفاظتیارسولَ اللّٰہ

سہی جاتی نہیں   ہیں   سختیاں   سَکرات کی سرکار!

 سرِ بالیں   اب آؤ جانِ رَحمتیارسولَ اللّٰہ

مِرا یہ خواب ہو جائے شہا شرمِندئہ تعبیر

مدینے میں   پیوں   جامِ شہادت یارسولَ اللّٰہ

مِرے دل سے ہَوَ س د نیا کی دولت کی نکل جا ئے

عطا کردو مجھے بس اپنی الفتیارسولَ اللّٰہ

مِرے آنسو نہ ہوں   برباد دنیا کی مَحَبَّت میں 

رُلائے بس مجھے تیری مَحَبَّت یارسولَ اللّٰہ

پھنسا جاتا ہے دنیا کی مَحَبَّت میں   دلِ عطارؔ

کرو عطارؔ سے یہ دُور آفتیارسولَ اللّٰہ

 

عطا کر دو مدینے کی اجازت یارسول اللّٰہ

(مَدَنی مُنّوں   اورطَلَبہ کیلئے کلام )

 



Total Pages: 406

Go To