Book Name:Wasail e Bakhshish

دوا کے واسِطے بیمارِ عِصیاں   در پہ حاضِر ہے

نہ تم مایوس اِسے در سے پِھرانا  یارسولَ اللّٰہ

 

نُقُوشِ الفتِ دنیا مرے دل سے مٹا دینا

مجھے اپنا ہی دیوانہ بنانا  یارسولَ اللّٰہ

سلیقہ آپ کی یادوں   میں   رونے کا تڑپنے کا

پئے غوث و رضا مجھ کو سکھانا  یارسولَ اللّٰہ

پئے غو ثُ الوَرا، احمد رضا، مرشد ضِیاء الدین

عطا ہو عشق و مستی کا خزانہ  یارسولَ اللّٰہ

فِرِشتہ موت کا اب آچکا ہے رُوح لینے کو

سَرِ بالیں   ذرا جلدی سے آنا  یارسولَ اللّٰہ

کُھلے ہیں   دفترِ اعمال! ہائے! میرا کیا ہوگا!

بچانا شافِعِ محشر بچانا  یارسولَ اللّٰہ

یہ گندا ہے نِکمّا ہے یہ جیسا ہے تمہارا ہے

تمہیں   عطارِؔ عاصی کو نبھانا  یارسولَ اللّٰہ

 

گنا ہوں   کی نہیں   جا تی ہے عا دت یارسولَ اللّٰہ

گناہوں   کی نہیں   جاتی ہے عادت یارسولَ اللّٰہ

تمہِیں   اب کچھ کرو ماہِ رسالت یارسولَ اللّٰہ

گناہوں   سے مجھے ہوجائے نفرت یارسولَ اللّٰہ

نکل جائے بُری ہر ایک خصلتیارسولَ اللّٰہ

گُنہ لمحہ بہ لمحہ ہائے! اب بڑھتے ہی جاتے ہیں 

نہیں   پر اِس پہ ہائے کچھ نَدامت یارسولَ اللّٰہ

گنہ کرکر کے ہائے! ہو گیا دل سخت پتّھر سے

کروں   کس سے کہاں   جاکر شکایت یارسولَ اللّٰہ

 



Total Pages: 406

Go To