Book Name:Wasail e Bakhshish

پھر طوافِ خانۂ کعبہ کروں                            کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

میں   مدینے کا مسافِر اب بنوں                         کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

’’چل مدینہ‘‘ کی بِشارت دیجئے                     کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

اپنا غم اور چشمِ نم دے دیجئے                        کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

عشق میں   آہیں   بھروں  ، روتا رہوں                 کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

 

’’یارسولَ اللّٰہِ اُنْظُر حالَنا‘‘                    کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

’’یاحبیبَ اللّٰہِ اِسْمَعْ قالَنا‘‘                   کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

’’اِنَّنِی فِیْ بَحْرِ ھَمٍّ  مُّغرَقٌ‘‘                      کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

’’خُذْ یَدِیْ سَھِّلْ لَّنَا اَشْکَالَنَا‘‘                   کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

اِستِقامت دیجئے اسلام پر                        کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

دل سے دنیا کی ہَوَس سب دورہو                 کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

نَزْع، قَبْر و حشْر، مِیزاں   ہر جگہ                   کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

عیب کُھل جائیں   نہ مَحشَر میں   کہیں                 کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

از طفیلِ چار یارِ باصفا                            کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

صَدقہ شہزادوں   کا آقا کیجئے                     کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

سب صَحابہ کا وسیلہ سیِّدا                        کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

غوث و خواجہ اور رضا کا واسِطہ                  کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

مُرشِدی قطبِ مدینہ کے طُفیل               کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

’’دعوتِ اسلامی‘‘ والوں   پر سدا              کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

ہر ولی کاواسِطہ عطّارؔ پر

کیجئے رَحمت اے نانائے حسین

 

یاخدا حج پہ بُلا آکے میں   کعبہ دیکھوں 

یاخدا! حج پہ بُلا آکے میں   کعبہ دیکھوں 

کاش! اِکبار میں   پھر میٹھا مدینہ دیکھوں 

پھرمُیَسَّر ہومجھے کاش! وُقوفِ عَرفات

 



Total Pages: 406

Go To