Book Name:Wasail e Bakhshish

کیجئے شاد کام([1])، اپنا کہہ کے غلام         جھوم جائیں   گے ہم، تاجدارِحرم

مال بھی آل بھی، بال بھی کھال بھی    صدقے جان و دِلَم، تاجدارِحرم

تیراکھاتے ہیں  ہم، تیراپیتے ہیں  ہم        تیرے رب کی قسم، تاجدارِحرم

ایسا کر دو سبب، بس اُتر جائے اب      دِل میں   خارِ حرم، تاجدارِحرم

یہ چمک یہ دمک، یہ مَہک یہ لہک        ہے بہارِ قدم، تاجدارِحرم

جو بھی مانگا مِلا، مرحبا مرحبا                شانِ جود و کرم، تاجدارِحرم

گھر سجاتے رہیں   اور مناتے رہیں             عیدِ مِیلاد ہم، تاجدارِحرم

عیدِ میلاد میں  ، گاڑیں   گے یاد میں         سبز پیارا عَلَم([2])، تاجدارِحرم

 

گُنگناتے رہیں  گیت گاتے رہیں            عمر بھر تیرے ہم، تاجدارِحرم

تیرے دیوانے سب، آئیں  سُوئے عَرَب    دیکھیں   سارے حرم، تاجدارِحرم

سینہ جلتا رہے، دِل مچلتا رہے            ہو نگاہِ کرم، تاجدارِحرم

یارسولِ خُدا، سروَرِ انبیا                    ہو نگاہِ کرم، تاجدارِحرم

غم کی کالی گھٹا، کو شہا دو ہٹا                 ہو نگاہِ کرم، تاجدارِحرم

مِہرو ماہِ مُبیں  ، ہے یہ عرضِ حَزیں  ([3])      ہو نگاہِ کرم، تاجدارِحرم

یانبی المدد، اے رسول المدد            ہو کرم ہو کرم، تاجدارِحرم

جلوئہ یار ہو، قبرِ عطارؔ ہو                    کاش ہو یہ کرم، تاجدارِحرم

 

میں   سَراپا ہوں   غم، تاجدارِ حرم

میں   سَراپا ہوں   غم، تاجدارِحرم                     کیجےرَحم و کرم ،    تاجدارِحرم

اُجڑا اُجڑا سماں  ، چھاگئی ہے خَزاں                       برسے ابرِکرم، تاجدارِحرم

اے شہِ بحروبر، آہ! کمزور پر                          ٹوٹا کوہِ اَلَم، تاجدارِحرم

 



[1]     خوش حال    ۔

[2]     پرچم  ۔

[3]     غمگین ۔



Total Pages: 406

Go To