Book Name:Wasail e Bakhshish

دل سے دُنیا کی مَحَبَّتدُور کر کے دیجئے                اپنی اُلفت اپنی چاہت دَرد و رِقّت یارسول

تاجِ سلطانی ہے میری ٹھوکروں   پر یانبی                 تیرا نَعلِ پاک میرا تاجِ عزّت یارسول

ٹوٹ جائے دم مدینے میں   شہا! عطارؔ کا

اور بقیعِ پاک میں   بن جائے تُربَت  یارسول

 

ہوبیاں   کس سے تمھا ری شان و عَظمت یارسول

ہو بیاں   کس سے تمہاری شان وعَظمت یارسول

جب تمہاری خود خدا کرتا ہے مِدحت یارسول

جب بھی آتا ہے تِرا یومِ ولادت یا رسول

خوب ہوتی ہے مُیَسَّر دل کو راحت  یارسول

عَرش پر بھی سلطنت ہے فَرش پر بھی سلطنت

دونوں   عالم پر تمھاری ہے حکومت  یارسول

دولتِ دنیا کے پیچھے مارا مارا کیوں   پھروں  !

آپ ہی ہیں  میری دولت اور ثروت   یارسول

جو تڑپتے ہیں   مدینے کے لئے آقا اُنہیں 

کاش! ہوجائے مدینے کی زیارت  یارسول

لمحہ لمحہ بڑھ رہی ہیں   ہائے! نافرمانیاں   

اور گناہوں   کی نہیں   جاتی ہے عادت   یارسول

کاش! ہنسنے کے بجائے مجھ کو رونا ہو نصیب

آنکھ سے بہتے رہیں   اشکِ محبت  یارسول

 

نیکیوں   میں  یارسولَ اللّٰہ دل لگ جائے کاش!

اور گناہوں  سے مجھے ہوجائے نفرت  یارسول

یانبی! بے کار باتوں   کی ہوعادت مجھ سے دُور

 بس دُرُودِ پاک کی ہوخوب کثرت   یارسول

آمِنہ کے لال! مجھ کو دیجئے سوزِبلال

مالِ دنیا سے مجھے ہوجائے نفرت  یارسول

 



Total Pages: 406

Go To