Book Name:Karamaat e Farooq e Azam رضی اللہ تعالیٰ عنہ

کی صحبت اِختِیارکرنے کی توفیقِ رفیق مرحمت فرمائے اوربے ادَبوں اور گستاخوں کی صحبت سے ہماری حفاظت فرمائے ۔اٰمین بِجاہِ النَّبِیِّ الْاَمین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وسلَّم

از خدا جُوئیم توفیقِ ادب بے ادب محروم گشت از فضلِ رب

(یعنی اپنے رب عز وجل سے توفیقِ ادب طلب کرو ، بے ادب فضلِ رب سے محروم پھرتا ہے)

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیْب! صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

فاروقِ اعظم کے مُتَعَلِّق عقیدۂ اہلسنّت

حضرتِ سیِّدُنا عُمَرفاروقِ اَعظم رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ کیمُتَعَلِّق اہلِ سنّت و جماعت کا عقیدہ جاننا ضروری ہے چُنانچِہ دعوتِ اسلامی کے اِشاعَتی ادارے مکتبۃُ المدینہ کی مطبوعہ 1250 صَفْحات پر مشتمل کتاب ، ’’بہارِ شریعت‘‘جلد اوّل صَفْحَہ 241پر ہے:’’ بعدِ اَنبیا و مُرسلین(عَلَیْہِ الصَّلَاۃُ وَالسَّلَام)، تمام مخلوقاتِ اِلٰہی اِنس و جنّ و مَلک(یعنی فِرِشتوں ) سے اَفضل صدِّیقِ اَکبر ہیں ، پھر عُمَر فاروقِ اعظم، پھر عثمانِ غنی، پھر مولیٰ علی کَرَّمَ اللہُ تَعَالٰی وَجْہَہُ الْکَرِیْم، جو شخص مولیٰ علی کَرَّمَ اللہُ تَعَالٰی وَجْہَہُ الْکَرِیْم کو صِدِّیق یا فاروق رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُمَا سے افضل بتائے گمراہ، بدمذہب ہے۔‘‘ (بہارِشریعت)

صَحابہ میں ہے افضل حضرتِ صِدِّیق کا رُتبہ

ہے اُن کے بعد اعلیٰ مرتبہ فاروقِ اعظَم کا

دعوتِ اسلامی کے اِشاعَتی ادارے مکتبۃُ الْمدینہ کے مطبوعہ ترجَمے والے پاکیزہ قران، ’کنزالایمان مَعَ خزائنُ العرفان‘‘ صَفْحَہ974پر اللہُ الْمَجِیْد عَزَّ وَجَلَّ

 



Total Pages: 48

Go To